Code : 4350 2 Hit

صہیونی مشرقی یروشلم میں ایک مسجد کو گرانے کرنے کی کوشش کر رہے ہیں:فلسطینی ذرائع ابلاغ

فلسطینی ذرائع کا کہنا ہے کہ صہیونی حکام مشرقی یروشلم میں ایک مسجد کو مسمارکرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ولایت پورٹل:معا نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق  فلسطینی ذرائع نے بتایا ہے کہ صہیونی عہدیدار مشرقی یروشلم میں ایک مسجد کو تباہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، ذرائع نے بتایاکہ  صہیونی حکومت کی بلدیہ کے اہلکاروں نے مسجد اقصیٰ کے جنوب میں واقع سلوان شہر پر حملہ کیا اور ابو تایہ علاقہ کے نواح میں واقع القعقاع محلہ کی مسجد سمیت کچھ عمارتوں کو تباہ کرنے کی وارننگ جاری کی ہے۔
فلسطینی ذرائع نے مزید کہا کہ صہیونی حکومت نے رہائشیوں کو مسجد اور ان کے مکانات تباہ کرنے کے فیصلے کے خلاف اعتراض کرنے کے لیے 21 دن کی مہلت دی ہے،یادرہے کہ القعقاع مسجد تقریبا آٹھ سال قبل مقامی لوگوں کی مدد سے تعمیر کی گئی تھی، دو سال پہلے اس کی دوسری منزل تعمیر کی گئی تھی تاکہ اس محلے کے نمازی ، جس کی آبادی سات ہزار افراد پر مشتمل ہے ، وہاں نماز پڑھ سکیں،ان ذرائع نے زور دے کر کہا کہ صہیونی دعوی کرتے ہیں کہ اس عمارت کو رہائش کے لیے استعمال کیا جاتا ہے نہ کہ مسجد کے طور پر،تاہم ابو تاہیہ کے رہائشیوں نے معا نیوز ایجنسی کو بتایا کہ اجازت نامہ حاصل کرنے اور مسمار کرنے کا کام روکنے کے لیے ان کی طرف سے کی جانے والی بار بار کوششیں ناکام ہو گئی ہیں۔
سلوان لینڈ ڈیفنس کمیٹی کے ممبر خالد ابو تایہ نے قدس الاخباریا کو بتایا کہ اسرائیلی عہدیداروں نے برسوں سے اس مسجد کو نشانہ بنایا  ہواہے  اور مسجد کو مسمار کرنےکا فیصلہ لینے  کے لئے آئندہ ماہ عدالتی سماعت ہوگی جو یقینا صیہونیوں کے حق ہی میں ہوگا اس لیے کہ انھیں معلوم ہے کہ فلسطینیوں کا ساتھ دینے والا کوئی نہیں ہے اور نہ کوئی بولنے والا ہے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین