شامی پناہ گزین کیمپ میں صیہونیوں کی جاسوسی

عراقی علماء یونین کے سربراہ نے اس بات پر زور دیا کہ صیہونی حکومت انسانی اور قانونی تنظیموں کے بھیس میں شام کے الحول کیمپ میں جاسوسی کر رہی ہے۔

ولایت پورٹل:عراقی علماء یونین کے سربراہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ صیہونی حکومت کی جاسوسی سروس موساد کے شام میں چار ہیڈ کوارٹر ہیں،جبار المعموری نے کہا کہ اسرائیلی موساد کے الحل کے شامی پناہ گزین کیمپ میں چار خفیہ اڈے ہیں۔
انہوں نے مزید کہا کہ موصولہ اعدادوشمار اور معلومات کے مطابق غاصب صیہونی حکومت فلاحی اداروں، انسانی اور قانونی تنظیموں کی آڑ میں الحول کیمپ میں جاسوسی کی سرگرمیاں انجام دے رہی ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ صیہونی کیمپ میں موجود تمام قومیتوں کے نوجوانوں اور نابالغوں کو مالی اور لاجسٹک مدد کر کے نیز تنخواہوں کی ادائیگی سے داعش کے سابق سربراہ البغدادی  کے دہشت گردانہ نظریات کو پھیلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔
المعموری کے مطابق عراقی نوجوان صیہونیوں کا اصل ہدف ہیں تاکہ مستقبل میں عراق میں دہشت گرد اور تکفیری گروہوں کے احیاء کے لیے اپنی صلاحیت کو بروئے کار لاتے ہوئے ملک کی سلامتی کو نقصان پہنچائیں اور دہشت گردانہ کاروائیاں کریں تاکہ امریکہ کو مزید اس ملک میں اپنی موجودگی کا جواز فراہم کرنے کا موقع مل سکے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین