Code : 2532 49 Hit

صہیونیوں کی امارات ، بحرین ، عمان اور مغرب کے ساتھ عدم جارحیت معاہدہ کرنے کی کوشش

واشنگٹن چار عرب ممالک ؛متحدہ عرب امارات ، بحرین ، عمان اور مغرب کو صیہونی حکومت کے ساتھ عدم جارحیت معاہدے پر دستخط کرنے کے لئے راضی کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

ولایت پورٹل:صہیونی میڈیا نے باخبر ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ  صہیونی حکومت اور چار عرب ریاستوں کے درمیان عدم جارحیت کے معاہدے کے قیام کے لئے تبادلۂ خیال ہورہا ہے،صیہونی سرکاری ٹیلی ویژن نے منگل کے روز اپنی ایک خصوصی رپورٹ میں صیہونی حکومت اور متعدد عرب ریاستوں کے درمیان عدم جارحیت کے معاہدے پر دستخط کرنے کی کوششوں کی تفصیلات کا ذکر کیا ہے،ذرائع ابلاغ  نے اسرائیلی اور امریکی عہدیداروں کے حوالے سے بتایا کہ واشنگٹن چار عرب ممالک ؛متحدہ عرب امارات ، بحرین ، عمان اور مغرب کو صیہونی حکومت  کے ساتھ عدم جارحیت معاہدے پر دستخط کرنے کے لئے راضی کرنے کی کوشش کر رہا ہے،عدم جارحیت کا معاہدہ  اگرچہ تعلقات اور کو معمول پر لانے سے کم ہے لیکن اس میں  فریقین سے ایک دوسرے پر حملہ نہ کرنے کے پابند ہوں گے اور  اس طرح کا معاہدہ صہیونی حکومت اور متعدد عرب ممالک کے درمیان تعلقات کو فروغ دینے کا سبب بنے گا،رپورٹ کے مطابق ، گذشتہ ہفتے امریکہ کی قومی سلامتی کونسل برائے مغربی ایشیاء اور شمالی افریقہ کے ڈپٹی سکریٹری  وکٹوریہ کوٹس نے متحدہ عرب امارات ، بحرین ، عمان اور مغرب کے سفیروں سے ملاقات کی اور عدم جارحیت معاہدے پر اپنی رائے پیش کرنے کو کہا  جس کے چاروں ممالک کے سفیروں کے کہ جن کے صہیونی حکومت کے ساتھ کوئی باضابطہ سفارتی تعلقات نہیں ہیں ، نے کہا ہے کہ وہ اس تجویز کو اپنے دارالحکومتوں میں منتقل کرنے کے بعد جلد از جلد جواب دیں گے،گزشتہ روز یہ رپورٹ بھی آئی  تھی کہ صیہونی ہوم لینڈ سکیورٹی کونسل کے سربراہ ، وزیر جنگ اور صہیونی حکومت کی وزارت انصاف کے نمائندوں پر مشتمل اسرائیل کا ایک اعلیٰ سفارتی اور سکیورٹی وفد اس معاہدے پر تبادلہ خیال کے لئے واشنگٹن  گیا تھا۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम