Code : 2544 35 Hit

ملائیشی سفارت کاروں کے خلاف صیہونیوں کی کینہ توزی

ملائشیا کے وزیر اعظم کے صہیونی مخالف ریمارکس پر مشتعل صہیونی وزارت خارجہ نے حال ہی میں ملائیشی سفارت کاروں کو مقبوضہ فلسطین کے علاقوں میں داخل ہونے سے روک دیا۔

ولایت پورٹل:العربی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق ملائیشین سفارتکار مقبوضہ مغربی پٹی  میں جانا چاہتے تھے کہ  صیہونی وزارت خارجہ کے عہدیداروں نے ملائیشین وزیر اعظم مہاتیر محمد کے اسرائیل مخالف تبصرے کا حوالہ دیتے ہوئے انھیں وہاں جانے سے روک دیا،العربی کے مطابق ، اسرائیلی وزارت خارجہ نے مہاتیر محمد کو اسرائیل مخالف انتہا پسند قرار دیا ہے جنہوں  نے حال ہی میں اسرائیلی ایتھلیٹوں کے ایک گروپ کو کھیلوں کے مقابلے میں حصہ لینے سے روکا تھا اوروہ صیہونزم  کے خلاف مخالفانہ اور سامی ریمارکس دیتے رہتے ہیں،صہیونی محکمہ خارجہ کے ایک اور اہلکار نے اپنا نام ظاہر نہ کرتے ہوئے  یہ بھی کہا کہ ملائیشین سفارتکار جب تک اپنی پالیسی تبدیل نہیں کرتے ہیں،اسرائیل میں داخل نہیں ہوسکیں گے،جب ملائشیا اپنی پالیسی بدلےگا  تب ہم اپنی پالیسی میں تبدیلی لائیں گے،یادرہے کہ ملائشیا کے صدر مہاتیر محمد نے حال ہی میں ایک تقریر میں کہا تھا کہ دنیا کے مسلمان فلسطینی مسلمانوں کے خلاف اسرائیل کی دہشت گردی کی کارروائیوں کو روکنے کی کوشش کریں۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम