ہمیں مغربی پٹی سے بچاؤ؛صیہونیوں کی اردن سے التجا

نیویارک میں اردن کے شاہ عبداللہ دوم سے ملاقات میں صیہونی وزیراعظم نے ان سے کہا کہ عمان کی حکومت یہودیوں کی عیدیں کے آنے سے قبل مغربی کنارے کے حالات کو پرسکون کرنے میں فلسطینی اتھارٹی کی مدد کرے۔

ولایت پورٹل:اردنی میڈیا رپورٹس کے مطابق منگل کی شب ہونے والی ملاقات کے دوران اسرائیلی وزیراعظم یائر لاپڈ نے ایک بار پھر دعویٰ کیا کہ تل ابیب کبھی خاموش نہیں رہے گا اور اپنے خلاف کسی بھی قسم کی دہشت گردی سے نمٹا جائے گا، صیہونی حکومت کے وزیر اعظم نے دعویٰ کیا کہ اسرائیل کبھی بھی اپنے شہریوں کی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کی اجازت نہیں دے گا۔
 صیہونی حکومت کے وزیر اعظم کے یہ الفاظ اردن کے بادشاہ عبداللہ دوم کی منگل کے روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں تقریر میں کے چند گھنٹے بعد سامنے آئے ہیں کہ یروشلم کا مستقبل دنیا بھر کے اربوں مسلمانوں، عیسائیوں اور یہودیوں کے لیے مقدس مقام کے طور پر تشویش کا باعث ہے۔
 اردن کے بادشاہ نے اپنے خطاب میں صیہونی حکومت جو بیت المقدس کی حیثیت کو تبدیل کرنے کی کوشش کر رہی ہے ، کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ یروشلم کی قانونی اور تاریخی حیثیت کو تبدیل کرنے سے کشیدگی کی آگ بھڑک اٹھے گی اور مذہبی تفرقہ مزید گہرا ہو جائے گا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین