رواں سال میں صیہونیوں کے ہاتھوں فلسطینیوں کے 300 سے زائد مکانات تباہ:اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کے دفتر رابطہ برائے انسانی امور مقبوضہ فلسطین (او سی اے) نے اس سال کے آغاز سے صیہونیوں کے ہاتھوں مغربی کنارے کے مختلف علاقوں میں 300 فلسطینی گھروں کو مسمار کیے جانے کا اعلان کیا ہے۔

ولایت پورٹل:الشرق الاوسط کی رپورٹ کے مطابق مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں انسانی امور کے رابطہ کاری کے لیے اقوام متحدہ کے دفتر (یو سی اے) نے صیہونیوں کے ہاتھوں مقبوضہ بیت المقدس سمیت مغربی کنارے کے مختلف علاقوں میں 300 فلسطینی گھروں کی مسماری کی رپورٹ جاری کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق رواں سال کے پہلے چھ مہینوں میں 300 فلسطینی گھروں کو مسمار کیا گیا جسے دیکھتے ہوئے یو سی اے نے صیہونی حکومت کی طرف سے مقبوضہ بیت المقدس اور مغربی کنارے بالخصوص "سی" کے علاقوں میں فلسطینیوں کے مکانات مسمار کرنے کی پالیسی کے خطرات سے خبردار کیا۔

اقوام متحدہ کے ادارے نے کہا کہ ہمیشہ کی طرح صیہونی حکومت فلسطینیوں کے مکانات کی مسماری کا جواز پیش کرتی ہے اور یہ دعویٰ کرتی ہے کہ ان کے پاس تعمیراتی اجازت نامہ نہیں ہے، تنطیم نے مزید کہا کہ صیہونیوں کے یہ دعوے ایسے وقت می کیے جارہے ہیں جبکہ اگر فلسطینی تعمیراتی اجازت نامہ حاصل کرنے کی کوشش بھی کریں تو انہیں نہیں ملے گا کیونکہ صیہونی حکومت نے مقبوضہ بیت المقدس اور اس کے (سی) علاقوں میں فلسطینی شہریوں پر سخت پابندیاں عائد کر رکھی ہیں اور انہیں ان علاقوں میں آباد ہونے کی اجازت نہیں دی جاتی۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین