صیہونی فوجی درندوں کے ہاتھوں فلسطینی جوان شہید

صیہونی فوجی دہشت گردوں نے رام اللہ میں ایک فلسطینی جوان کو گولی مار کر شہید کر دیا۔

ولایت پورٹل:العہد نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق مغربی کنارے میں فلسطینیوں کے خلاف صہیونی دہشت گردوں کی کارروائیوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے، رپورٹ کے مطابق صہیونی عسکریت پسندوں نے مغربی کنارے کے شہر رام اللہ پر حملہ کیا۔ اس وحشیانہ حملے کے بعد صیہونیوں اور فلسطینی شہریوں کے درمیان زبردست تصادم ہوا۔
عینی شاہدین نے بتایا کہ صہیونیوں نے جھڑپوں کے دوران فلسطینی شہریوں کے خلاف براہ راست گولہ بارود کا استعمال کیا، یہ جھڑپیں مغربی کنارے میں رام اللہ کے مغرب میں واقع دیر ابو مشعل  علاقہ کے قریب ہوئی ہیں، ان جھڑپوں کے دوران صہیونی عسکریت پسندوں نے ایک فلسطینی نوجوان کو گولی مار کر شہید کردیا، بتایا جاتا ہے کہ راملہ شہر میں صیہونیوں کی فائرنگ سے متعدد دوسرے فلسطینی شدید زخمی ہوئے ہیں۔
واضح رہے کہ ایک طرف صیہونی فلسطینوں کے خلاف ہر طرح کا ظلم وستم روا رکھے ہوئے ہیں،کبھی انھیں بغیر کسی جرم کے برسوں تک جیلوں میں ڈال دیا جاتا ہے جہاں ان کے خلاف مقدمہ بھی نہیں چلایا جاتا ہے اور نہ ہی انھیں عدالت میں حاضر کیا جاتا ہے بلکہ جیلوں میں انھیں بے تحاشہ تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے اور غیر انسانی سلوک  کیا  جاتا ہے اورکبھی براہ راست گولیوں سے بھون دیا جا تاہے جبکہ  دوسری طرف تمام عرب ممالک اسرائیل کے ساتھ تعلقات بحال کرنے کے لیے اور فلسطین کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے کے لیے صف بستہ نظر آرہے ہیں جس کی ابتدا متحدہ امارات نے کر لی ہے اب دیگر عرب ممالک کی باری ہے،کل ہی دبئی پولیس کے سابق ڈپٹی چیف نے کہا ہے کہ اسرائیلی ہمارے اپنے ہیں کوئی غیر تو نہیں اور ہر عرب ملک کا دارالحکومت  اسرائیل کا دار الحکومت ہے،اب عنقریب ہم دیکھیں گے کہ عرب ممالک کے حکمران صیہونیوں کے تلوے چاٹ رہے ہوں گے،امریکہ اور اسرائیل جو کہے گا وہ اس پر سر تسلیم خم کرتے ہوئے نظر آئیں گے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین