صیہونیوں کا فلیگ مارچ ناکام؛ فلسطینی مزاحمتی تحریک کی ایک اور کامیابی

حماس کے ایک ترجمان نے زور دے کر کہا کہ صہیونیوں کا"فلیگ مارچ" کے راستے کو بدلنا سیف القدس جنگ کی وجہ سے پیدا ہونے والے عبرت مساوات کے حصول کی تصدیق ہے۔

ولایت پورٹل:صفا نیوز ایجنسی  کی رپورٹ کے مطابق حماس کی تحریک نے اصرار کیا کہ صہیونی "فلیگ مارچ" ناکام ہوچکا ہے،حماس کے ترجمان فوزی برہوم نے ایک بیان میں کہا ہے کہ مقبوضہ بیت المقدس میں صہیونی "فلیگ مارچ" کا راستہ تبدیل ہوچکا ہے،انھوں نے مزید کہا  کہ مزاحمتی  تحریک کے شجاعانہ اور جرأت مندانہ موقف  نیزر اس کے حتمی فیصلوں نے صہیونی حکومت کو مارچ کا راستہ تبدیل کرنے پر مجبور کردیا۔
انہوں نے کہا کہ مارچ کو مسجد اقصی سے دور رکھا گیا ، اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ یہ رخ بدلا گیا ہے جو سیف القدس کی جنگ کے ذریعہ پیدا ہونے والے عبرت مساوات کے حصول کی تصدیق ہے،حماس کے عہدیدار نے بتایا کہ فلسطینی مزاحمتی تحریک ابھی بھی اس ملک کے عوام کی حمایت کی ڈھال ہے اور یہ صہیونی حکومت کا طرز عمل ہے جو اس کے ساتھ میدان محاذ آرائی کی سمت اور نوعیت کا تعین کرتا ہے۔
یادرہے کہ گذشتہ روز فلسطینی عوام کی مزاحمتی تحریک کی  حمایت اور اتحاد نے"فلیگ مارچ" کرنے والے انتہا پسند صہیونیوں کو راستہ تبدیل کرنے پر مجبور کر دیا جو صیہونیوں کے مقابلہ میں فلسطینیوں کی ایک اور کامیابی سمجھی جاتی ہے،قابل ذکر ہے کہ فلسطینی مزاحمتی تحریک نے اس مارچ کے سلسلہ میں صیہونی نئی بننے والی حکومت کو انتباہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ اگر یہ مارچ ہوا تو آپ کی انتہاپسند حکومت بننے سے پہلے ہی ختم ہو جائے گی یہاں تک کہ امریکہ کو بھی اس سے خوف محسوس ہوا اور اس نے بھی صیہونیوں کو کشیدگی ایجاد کرنے سے پرہیز کرنے کو کہا جس کے بعد صیہونیوں نے اس مارچ کا راستہ بدل دیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین