مغربی پٹی میں پرامن فلسطینی مظاہرین پر صہیونی درندہ فوج کا حملہ

صہیونی عسکریت پسندوں نے مغربی کنارے کے مشرق میں فلسطینی مظاہرین پر حملہ کیا جوصیہونی بستیوں کی غیر قانونی تعمیر کے خلاف احتجاج کر رہے تھے  جس میں تین فلسطینی زخمی ہوگئے۔

ولایت پورٹل:اناطولیہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صہیونی عسکریت پسندوں نے ہفتے کے روز مغربی کنارے کے مشرق میں جوصیہونی بستیوں کی غیر قانونی تعمیر کے خلاف مظاہرہ کرنے والے فلسطینی شہریوں پر حملہ کیا، رپورٹ کے مطابق صہیونی فوج کے طوباس کے علاقے میں فلسطینی مظاہروں پر حملے کے نتیجے میں متعدد فلسطینی زخمی ہوگئے۔
واضح رہے کہ  صہیونی ملیشیا نے فلسطینیوں کو منتشر کرنے کے لئے راکٹ سے چلنے والے دستی بموں کا استعمال کیا جس کے نتیجہ میں تین فلسطینی زخمی ہوگئے،یادرہے کہ  فلسطینیوں نے پہلے ہی طوباس کے علاقے میں آباد کاریوں کے خلاف احتجاج کا مطالبہ کیا تھا۔
قابل ذکر ہے فلسطینیوں کی پیٹھ میں چھرا مار کر اور عالم اسلام کے ساتھ غداری کر کے صیہونیوں کے ساتھ تعلقات بحال کرنے والے شیخ نشین عرب ممالک کا دعوی تھا کہ اسرائیل کو تسلیم کرکے ہم فلسطینیوں کے خلاف مظالم کو رکوا دیں گے نیز صیہونیوں بستیوں کی تعمیر بھی نہیں ہوگی تاہم ایسا کچھ نہیں ہوا اور تعمیر کا سلسلہ بدستور جاری ہے جس کے بارے میں متعدد صیہونی عہدہ دار دعوی کر چکے ہیں عرب ممالک سے تعلقات معمول پر لانے کا بستیوں کی تعمیر پر کوئی اثر نہیں پڑے گا خاص طور پر نفتالی بینٹ کی حکومت کے بعد جن کا اس سے پہلے بھی فلسطینیوں کی سرزمین پرغیر قانونی صیہونی بستیوں کی تعمیر میں اہم کردار رہا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین