Code : 4645 6 Hit

اسرائیل کو تسلیم کرنے والے عرب ممالک کے رہنماؤں کو صیہونی تنظیم کا ایوارڈ

صہیونی فرینڈ ہیریٹیج سنٹر کے بانی مائیک ایونس نے ابو ظہبی کے ولی عہد شہزادہ محمد بن زید آل نہیان ، بحرین کے بادشاہ حمد بن عیسیٰ ، سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان ، مغرب کے بادشاہ محمد ششم اور ہیثم بن طارق کو صہیون ایوارڈ پیش کیااور ان کے اسرائیلی حکومت کے دوست ہونے کا اعلان کیا۔

ولایت پورٹل:الخلیج الجدید نیوز ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق ایونس کا دعویٰ ہے کہ یہ تمام سربراہان اور بادشاہ اپنے سفارت خانوں کو مقبوضہ بیت المقدس منتقل کریں گے، انہوں نے یہ بھی دعوی کیا کہ تمام مسلم رہنما مناسب وقت پر اسرائیل کے ساتھ صلح کریں گے۔
ایونز نے صہیونی حکومت کی چوتھی سالانہ میٹنگ کے دوران عیسائی میڈیا  کے سامنے ان ایوارڈز کا اعلان کیا، یہ میٹنگ ہر سال ہوتی ہے  لیکن اس سال پہلی بار دنیا بھر کے ناظرین نے اس کو دیکھا، اس اجلاس میں اسرائیلی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو ، صیہونی صدر روون ریولن اور مقبوضہ علاقوں میں امریکی سفیر ڈیوڈ ڈی فریڈمین ، جو ایک صیہونی یہودی ہیں، نے شرکت کی۔
ایونز نے اسرائیلی وفد سے ملاقات کے دوران بن سلمان کے بیان کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ انہوں نے دعوی کیا ہے کہ فلسطینی اسرائیل کی مدد سے اپنے مسائل حل کرسکتے ہیں اور یہ کہ بچوں کو یہ تعلیم دی جانی چاہئے کہ یہودیوں سے نفرت نہ کریں نیز دنیا دہشت گردی کو سیاسی اہداف تک پہنچنے کا ذریعہ نہیں بننے دے گی۔
یاد رہے کہ مذکورہ صہیونی تنظیم ، جو "عظیم خود مختار اسرائیل" منصوبے کو شروع کرنے کی کوشش کر رہی ہے ، جس میں سعودی عرب کے مشرقی علاقے بھی شامل ہیں ، نے سعودی ولی عہد کی تعریف کرتے ہوئے انہیں مستقبل پر نظر رکھنے والا قرار دیا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ اس صہیونی تنظیم کی نیوز ویب سائٹ کے مطابق  یہ ایوارڈ ہر سال ان عالمی رہنماؤں کو دیا جاتا ہے جو اسرائیلی حکومت کے ساتھ ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین