Code : 3094 13 Hit

یمن کے صوبہ الجوف یمنی فوج کے محاصرے میں؛ ریاض کی کوششیں ناکام

اگرچہ سعودیوں نے یمنی فوج اور عوامی کمیٹیوں کی پیش قدمی روکنے کی کوشش کرتے ہوئے یمنی صوبے الجوف کے قبائلوں کی وفاداری خریدنے کی کوشش کی لیکن یہ کوششیں ناکام ہوگئیں اور یمنی فوج کی پیش قدمی بدستور جاری ہے۔

ولایت پورٹل:الاخبار روزنامہ کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کی جانب سے یمن میں فوجی مداخلت  اور یمنی صوبے الجوف کے قبائلوں کی وفاداری خریدنے کی کوشش
 کی تا کہ یمنی فوج اور عوامی کمیٹیوں کی اس صوبہ کے مرکز ’’حزم‘‘ کی جانب پیش قدمی کو روکا جاسکے لیکن اس کے باوجود یہ  پیش قدمی جاری ہے  اور حزم کے آس پاس کے سب سے اہم محاذ ٹوٹ جانے کے بعد اب اس شہر کو یمنی فوج نے تین  طرف سے گھیر لیا ہے۔
رپورٹ کے مطابق سعودی عرب نے پچھلے کچھ دنوں میں یمن کے شمال میں واقع الجوف صوبہ  میں درجنوں نئی فوجی گاڑیاں بھیجی ہیں  تاکہ شاید وہاں  جنگ کا رخ تبدیل کرسکیں اور اس کو  اتحادیوں کے حق میں کر سکیں لیکن وہ یمنی فوج اور عوامی کمیٹیوں کو اس شہر تک پہنچنے سے روکنے میں ناکام رہے اور اب یہ شہر یمنی فوج کے قبضہ میں آنے والا ہے کیونکہ  انھوں نے اس کو تین  طرف سے گھیر لیا ہے۔
واضح رہے کہ ریاض سیکڑوں عسکریت پسندوں کو مأرب اور شبوه سے لے کر آیا ہے اوریہاں قبائلوں کی وفاداری خریدنے کی کوشش کر رہا ہے۔
یمن کی انصاراللہ تحریک کے وفادار ایک قبائلی ذرائع نے الاخبار کو بتایاکہ الجوف کے 70% سے زیادہ علاقے فوج اور عوامی کمیٹیوں کے کنٹرول میں ہیں۔
اگرچہ متعدد محاذوں پر لڑائیاں شدت اختیار کرچکی ہیں اور دشمن نے شہر الغیل کے کچھ حصوں پر دوبارہ قبضہ کرنے کی کوشش کی  لیکن یہ ناکام رہی اور شمال مغرب کی طرف فوج کی پیشرفت جاری ہے۔


 

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम