Code : 2917 49 Hit

یمن میں ایک اور حزب اللہ نہیں بننے دیں گے:برطانوی سفیر

یمن میں برطانوی سفیر نے ریاض اور لندن کی پالیسی کے مکمل تعمیل کی نقاب کشائی کرتے ہوئے کہا کہ سعودی اتحاد اور لندن انصار اللہ کو حزب اللہ میں تبدیل نہیں ہونے دیں گے۔

ولایت پورٹل:یمن میں تعینات برطانوی سفیر مائیکل آرون نے الحدیث نیوز چینل کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سلامتی کونسل کا آج یمن کے بارے میں بند دروازہ اجلاس ہوگا  جس  کے بعد مغربی ذرائع کے مطابق  بیان جاری کرنے کا امکان ہے۔
انھوں نے مزید کہا کہ یمن سے متعلق بند اجلاس میں سلامتی کونسل کے ممبروں کے لئے تین امور اہم ہیں؛ حالیہ جھڑپوں کو روکنا ، سعودی اور حوثیوں کے مابین جنگ بندی  اور ریاض معاہدے پر عمل درآمدکرانا۔
یمن میں جامع مذاکرات کی فوری ضرورت کا اعادہ کرتے ہوئے انہوں نے حزب اللہ اور یمن کے خلاف سعودی الزامات کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ سعودی اتحاد اور برطانیہ یہ قبول نہیں کریں گے کہ حوثی یمن میں ایک اور حزب اللہ بن جائیں ۔
برطانوی سفیر نے مزید کہا ہمارا موقف واضح ہے، یمن میں جو کچھ ہو رہا ہے وہ بغاوت ہے ، ہم نے قرارداد2216لکھی، ہم غیر جانبدار نہیں ہیں اور ہم اس ملک کی آئینی حکومت کو قبول کرتے ہیں (یمن کی مستعفی حکومت)۔
دوسری جانب ، یمن آنے والے اقوام متحدہ کے مندوب مارٹن گریفھیس نے یمنی جماعتوں پر زور دیا ہے کہ وہ تناؤ کو کم کریں اور تنازعہ کے پرامن حل کے عزم کی تجدید کریں۔
یادرہے کہ پچھلے ہفتے یمن کی مستعفی حکومت کے کارندوں  نے مشرقی صنعا میں نویں محاذ پر حملہ کیا  جس کے بعد محاذ بھکر گیا ۔
تاہم یمنی فوج اور عوامی ک کمیٹیوں نے اتحادی افواج کو زبردست شکست دی۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम