Code : 2263 115 Hit

عوام کے جائز مطالبات کو پورا کریں گےلیکن صبر سے کام لینا ہوگا: عراقی وزیر اعظم

عراق کے وزیر اعظم نے آج یہاں کی ٹیلی ویژن پر براہ راست گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت عوام کے جائز مطالبات کو پورا کرنے کی بھرپور کوشش کرے گی لیکن ہمارے پاس کوئی جادو کی چھڑی نہیں ہےجس کے ذریعے سے ایک سال کے اندر عوام کے تمام مطالبات کو پورا کردیے جائیں ۔

ولایت پورٹل:عراقی وزیر اعظم عادل عبد المہدی نے  اس ملک میں پیش آنے والے حالیہ واقعات کے سلسلے میں یہاں کی سرکاری ٹیلی ویژن پر براہ راست تقریر کی ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ ہمارے پاس دو ہی راستے ہیں یا حکومت باقی رہے گی یا باقی نہیں رہے گی، عراقی وزیراعظم نے وضاحت کی کہ چند دشمن عناصرعراق کے بعض شہروں میں مظاہروں کو ان کی پرامن حالت سے پرتشددحالت  میں بدلنے میں کامیاب ہوچکے ہیں، انہوں نے عراق کی تمام ریاستوں میں حالات معمول پر لانے  کا تقاضہ کیا نیز لوگوں کو یہ اطمینان دلانے کے لئے کہ مظاہرین پر کسی طریقے کا تشدد نہیں کیا جائے گا اس کے لیے کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی  ہیں، عراقی وزیراعظم نے مزید کہا کہ کہ لوگوں کو  اپنی آواز منتقل کرنے میں کوئی رکاوٹ نہیں ہے  اور حکومت کا فرض ہے کہ وہ عوام کے جائز مطالبات کو پورا کرے اور بدعنوانیاں اور  جوانوں کے مستقبل کے لئے پریشان ہونا یہ جائز مطالبات ہیں، عراقی وزیر اعظم نے کہا حکومت نے اقتصادی اصلاحات شروع کر رکھی ہیں جن کے ذریعے جوانوں میں بیکاری کم ہوجائے گی لیکن بدعنوانی کے ساتھ مقابلہ کرنے کے لیے زیادہ کوشش کی ضرورت ہے، انہوں نے کہا کہ میں پارلیمنٹ میں  ایک تجویز رکھوں گا جس میں غریب گھرانوں کی مددکرنے کے لیے کہا  جائے گا،تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ حکومت کے پاس کوئی جادو کی چھڑی نہیں ہےجس کے ذریعے سے ایک سال کے اندر عوام کے تمام مطالبات کو پورا کردے، انہوں نے کہا کہ حالیہ اعتراضات میں گرفتار ہونے والے سب افراد کو آزاد کر دیا جائے گا سوائے ان کے جنہوں نے کوئی جرم  انجام دیا، یاد رہے کہ منگل سے عراق کے کئی شہروں میں بے روزگاری ،بدعنوانیاں  اور دیگر کئی مسائل کے  سلسلے میں اعتراضات ہو رہے ہیں جبکہ حکومت نے کئی بار تاکید کی ہے کہ پرامن احتجاج کرنا عراقی عوام کا حق ہے ،انہوں نے عوام سے گزارش کی ہے کہ وہ قانون کے دائرے میں رہ کر اعتراض کریں اور تشدد کرنے سے پرہیز کریں۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम