Code : 4402 3 Hit

ایران کو تنہا کرتے کرتے امریکہ خود تنہا ہوگیا ہے:نیو یارک ٹائمز

ایک امریکی اخبار نے لکھا ہے کہ واشنگٹن نے ایران کو الگ تھلگ کرنے کے لئے یورپی ممالک اور یہاں تک کہ روس اور چین کو بھی اپنے ساتھ ملا لیا تھا لیکن اب خود ہی تنہا ہوچکاہے۔

ولایت پورٹل:امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے آج (پیر) کواپنے اداریہ میں اسنیپ بیک کے نام سے جانے والے ایک میکانزم کا استعمال کرتے ہوئے اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف اقوام متحدہ کی پابندیاں  واپس پلٹانے کے امریکی حکومت کے دعوے کا تجزیہ کرتے ہوئے لکھا کہ اس مسئلہ میں واشنگٹن کے قریب ترین یوروپی اتحادیوں کی مخالفت واشنگٹن کی تنہائی کو ظاہر کرتی ہے، رپورٹ کے آغاز میں  2018 میں ایران کے جوہری معاہدے سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ کےدستبردار ہونے کےحوالے سے  کہا گیا ہےکہ ٹرمپ نے اس معاہدے کو جس پر اوباما انتظامیہ اور امریکی یوروپی اتحادیوں نے بڑی مشکل سے بات چیت کی تھی تاریخ کا بدترین معاہدہ قرار دیا،امریکہ کا اس معاہدے سے نکلنا اس قدر حیرت انگیز تھا کہ اس نے دوسرے ممالک کو اس فکر میں مبتلا کردیا کہ آیا وہ امریکی صدارتی انتخابات کے بعد تک اپنے بین الاقوامی وعدوں کو برقرار رکھنے کے لئے امریکہ پر اعتماد کرسکتے ہیں یا نہیں۔
نیویارک ٹائمز نے اپنے اداریے میں یہ کہتے ہوئے کہ ٹرمپ انتظامیہ کے نقطہ نظر نے یورپی اتحادیوں کو ملک سے دور کردیا ہے،لکھا ہے کہ  ایک وہ وقت تھا جب امریکہ نہ صرف فرانس ، جرمنی اور برطانیہ بلکہ روس اور چین کے ساتھ بھی کندھے سے کندھا ملا کر ایران کو الگ تھلگ کرنے کے لئے تیار تھالیکن اب صورتحال یہ ہے کہ وہ خود تنہا ہو کر رہ گیا ہے، ٹرمپ انتظامیہ نے ایران کے خلاف عالمی اتحاد کو ختم کردیا ہے ۔
مذکورہ اخبار نے لکھا ہے کہ واشنگٹن کے دعووں کے برعکس امریکی پابندیوں کا ایرانی عوام کی زندگیوں پر اثر پڑا ہے اور خاص طور پر کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے دروان انھیں اس وبا کا مقابلہ کرنے کے لیے ضروری سامان اور دوا میسر نہیں ہوئی لیکن امریکہ ایرانے حکومت کو گھٹنے ٹکانے میں ناکام رہا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین