Code : 3642 6 Hit

فلسطینی ریاست نہیں بننےدیں گے:صہیونی عہدیدار

صہیونی کابینہ کے اتحاد کے سکریٹری نے آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کی مخالفت کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وہ کابینہ یا نسیٹ کو فلسطینی ریاست کے قیام کی اجازت نہیں دیں گے۔

ولایت پورٹل:صیہونی اخبارعارٹس شوع کی رپورٹ کے مطابق مغربی کنارے پر قبضے کے منصوبے پر عمل درآمد کو لے کر اسرائیلی عہدیداروں اور سیاستدانوں کے درمیان اختلافات بڑھتے جارہے ہیں، اس بار تل ابیب کابینہ اتحاد کے سکریٹری  مکی زہر نے فلسطینی ریاست کے قیام کی مخالفت کی ہے۔
زہر نے صیہونی اخبار کو بتایا کہ میں اسرائیل کے تمام حصوں میں یہودی آباد کاریوں کے قبضے کی حمایت کرتا ہوں نیزکم سے کم 30 فیصد یہودیہ اور سامریہ (مغربی کنارے) میں شامل ہونا ایک تاریخی موقع ہے البتہ اس کا مستقبل غیر یقینی ہے۔
انہوں نے کہا کہ میں فلسطینی ریاست کے اصول کی سختی سے مخالفت کرتا ہوں،میں ایسی صورتحال کی اجازت نہیں دوں گا جس میں کابینہ یا نسیٹ فلسطینی ریاست کے قیام کے لئے خود کو پابند کریں۔
صہیونی عہدیدار نے اعتراف کیا کہ سنچری ڈیل نامی منصوبہ عمل درآمد ہونے میں ابھی بھی مسائل موجود ہیں۔
ان مسائل میں سڑکیں ، منسلک علاقے اور بہت کچھ شامل ہیں ،یہ حل طلب مسائل نہیں ہیں۔
لیکن فلسطینی ریاست کے مسئلہ سے میں قطعا اتفاق نہیں کرتا ہوں۔
واضح رہے کہ امریکی حکومت کی حمایت سے ، صہیونی حکومت فلسطین کے مغربی پٹی کے 30٪ حصہ پر سرکاری طور پر قبضہ کرنے کا  ارادہ رکھتی ہے۔
قابل ذکر ہے کہ فلسطینی عہدیداروں اور گروپوں کے درمیان اس اقدام کو امریکی صہیونی ڈیل کے نام سے جانا جاتا ہے اور فلسطین مخالف منصوبے کے ایک حصے کے طور پر دیکھا ہے  یہی وجہ ہے کہ وہ امریکہ اور اسرائیل کے ساتھ تعلقات منقطع کرنا چاہتے ہیں۔
 
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین