Code : 3017 24 Hit

ملک کے کچھ حصوں سے نکل جائیں گے؛امریکہ کی عراق کو پیشکش

امریکی فوج نے عراقی سکیورٹی عہدیداروں کے سامنے ملک کے کچھ حصوں سے اپنی فوج واپس بلانے کا منصوبہ پیش کیا ہے۔

ولایت پورٹل:میڈل ایسٹ آئی نے اپنی ویب سائٹ پرعراق سے امریکی فوج کےانخلاء پر مبنی  ایک رپورٹ  پیش  کی ہے جس میں آیا ہے کہ واشنگٹن نےامریکی فوج کے عراق سے نکل جانے پر مبنی  عراقی پارلیمنٹ کی جنوری کی قرارداد کے جواب میں یہ تجویز پیش کی ہے  کہ وہ  اپنی فوج کا کچھ حصہ واپس بلا لیں گے۔
یادرہے کہ عراقی پارلیمنٹ نے امریکہ کے ہاتھوں جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے بعد قراداد پاس کی تھی کہ امریکی فوج کو فوری طور پر عراق سے نکل جانا ہوگا ۔
رپورٹ کے مطابق  امریکی فریق نے عراقی عہدیداروں سے گذشتہ ہفتے ایک انتہائی خفیہ ملاقات کے دوران انخلا کے معاملے کے پر مشاورت کرنے کے لیے اپنی آمادگی ظاہر کی ۔
امریکی فوج کے ایک نمائندے نے اجلاس میں شریک عراقیوں کو بتایا کہ امریکہ بغداد کے شمال میں بلد ایئر بیس جیسے شیعہ علاقوں سے دستبرداری کے لئے تیار ہے۔
میڈل ایسٹ آئی نے مزید لکھا ہے کہ عراقیوں کو بتایا گیا ہے کہ واشنگٹن بغداد میں اپنی موجودگی کم کرنے پر بھی غور کرسکتا ہے۔
رپورٹ کے مطابق عراقی عہدے داروں کو معلوم ہوگیا ہے کہ واشنگٹن اپنے سفارتخانے اور ہوائی اڈے پر محافظ دستے رکھ کر عراقی دارالحکومت میں اپنی موجودگی کو کم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔
تاہم ، امریکی فریق نے عراق میں اپنے سب سے بڑے ہوائی اڈے ، عین الاسد کے اڈے سے نکلنے کو مسترد کردیا ہے۔
یہ اڈہ صوبہ الانبار میں واقع  ہے  جسے گذشتہ ماہ ایران نے میزائل حملوں سے نشانہ بنایا تھا۔
امریکہ کا کہنا ہے کہ وہ عین الاسد کو اپنی سرخ لکیر سمجھتا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम