Code : 2550 30 Hit

ہم بغداد کے مظاہروں میں دراندازی کرنا چاہتے تھے: بغدادی کے جانشین کا اعتراف

منگل کو عراق میں حراست میں لیے گئے داعش کےسرغنہ نے اعتراف کیا ہے کہ انھوں نے عراق کے امن میں خلل ڈالنے کے لیے عوامی مظاہروں میں دراندازی کا مصونبہ بنا رکھا ۔

ولایت پورٹل:عراق میں مشترکہ آپریشن کے ترجمان حسین الخفاجی نے کہا کہ داعش دہشت گرد گروہ کے عناصر عراق کی موجودہ صورتحال سے فائدہ اٹھانے اور اس کی سلامتی کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہے ہیں،عراق میں مشترکہ آپریشن کے ترجمان حسین الخفاجی نے کہا کہ داعش دہشت گرد گروہ کے عناصر عراق کی موجودہ صورتحال سے فائدہ اٹھانے اور اس کی سلامتی کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہے ہیں،انہوں نے جمعرات کو کہا تھا کہ "حمید شاکر" کے نام سے مشہور "داعش کے سرغنہ نے  تفتیش کے بعددوران اعتراف کیا  ہےکہ داعش کے عناصر نے بغداد میں پرامن مظاہروں میں دراندازی کی کوشش کی تھی جس  کا مقصد ملک کے امن کو خراب کرنا  اور انتشار پھیلانا تھا،یادرہے کہ عراقی سکیورٹی فورسز نے رواں ہفتے کے آغاز میں صوبہ کرکوک میں ابو بکر بغدادی کے جانشین کو گرفتار کیا تھا،مشترکہ آپریشن کے ترجمان نے المعلومہ نیوز ایجنسی  کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے بغدادی کے جانشین کے اعترافات کے سلسلہ میں بتایا کہ ابو خلدون نے تفتیش کے دوران  اعتراف کیا ہے کہ اس نے کرکوک پہنچنے کے بعد بغداد جانے کا ارادہ کیا تھا اور وہاں پرامن مظاہرں دراندازی کا منصوبہ بنایا تھا،یاد رہے کہ عراقی سکیورٹی فورسز اور کچھ اہم شخصیات  اس سےپہلے ہی انتباہ دے چکے ہیں کہ مظاہروں کی آڑ میں ملک میں  انتشار اور عدم تحفظ پھیلانے کی کوشش کی جارہی ہے  جو داعش کے باقی بچے ہوئے  عناصر کی واپسی کا باعث بنے گا جس کے لیے متعدد بیرونی طاقتیں ایری چوٹی کا زور لگا رہی ہیں


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम