ہم لبنان کی مشکلات حل کرنے میں حصہ لینا چاہتے ہیں؛امریکی سفیر کی لبنانیوں کے تئیں اظہار ہمدردی!!

لبنان میں امریکی سفیر نے دعوی کیا کہ واشنگٹن لبنان کا محاصرہ کرنے کا ارادہ نہیں رکھتا ہے اور وہ لبنانی عوام کو ڈالر یا امداد سے محروم نہیں کرنا چاہتا ہے۔

ولایت پورٹل:لبنان میں تعینات امریکی سفیر ، ڈارٹی شیا نے لبنانی ویب سائٹ ’’مصدر دبلوماسی‘‘ کو بتایا کہ امریکہ لبنانی عوام کو ڈالر یا امداد سے محروم کرنے کی کوشش نہیں کر رہا ہے، انہوں نے دعوی کیا کہ ہم لبنان کا محاصرہ نہیں کر رہے ہیں ،جیسا کہ میں نے پہلے کہا تھا کہ ہم حل کا حصہ بننا چاہتے ہیں، ہم لبنانی حکومت کو ضروری اصلاحات کرنے کی ترغیب دلاتے ہیں لیکن اوقات بدقسمتی سے اس کا اثر منفی ہوتا ہے۔
شیا نے لبنان میں 300 امریکی کمپنیوں کی موجودگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ بہت سارے امریکی تاجر لبنانی حکومت کی اصلاحات کو دیکھنے کے لئے انتظار کر رہے ہیں جن کے بارے میں ہم نے بات کی  تھی۔
امریکی سفیر نے مزید کہا کہ لبنان کے بجلی کے شعبے میں بنیادی اصلاحات کی ضرورت اور کسٹم کے شعبے میں نمایاں اصلاحات کی ضرورت سمیت متعدد نکات پر پوری نہ صرف ریاستہائے متحدہ بلکہ پوری دنیا متفق ہے جس کی وجہ سے لبنانی حکومت نے گذشتہ برسوں میں اربوں ڈالر کی آمدنی کا نقصان کیا ہے،اس ملک میں مواصلات کے شعبے اور بینکاری کے شعبے میں اصلاحات  کی ضرورت ہے، اس کے علاوہ مختلف شعبے  بدعنوانی یا بد انتظامی جیسی مشکلات  کا شکار ہیں جس کا مقابلہ کرنے اور کمپنیوں کو راغب کرنے کا بہترین طریقہ شفافیت ہے۔
انہوں نے یہ دعوی کیا کہ لبنان میں امریکی اقدامات اور پالیسیوں کے بارے میں غلط فہمیاں پیدا ہوگئی ہیں جن کا مقابلہ کرنے کی وہ کوشش کررہی ہیں،شیا نے لبنانی فوج کو ملک کا ایک اہم ستون قرار دیتے ہوئے کہا کہ جب ہم  کئی دہائیوں کے عرصہ میں لبنان میں امریکی سرمایہ کاری کی مقدار پر نظر ڈالتے ہیں تو ہم دیکھتے ہیں کہ 2005 سے ہم وزارت داخلہ کے زیر انتظام سیکیورٹی فورسز کے علاوہ لبنانی فوج اور اس کی داخلی سکیورٹی فورسز کے لیے دو ارب ڈالر سے زیادہ مختص کرچکے ہیں، ہم انہیں حقیقت میں مضبوط شراکت دار سمجھتے ہیں کیونکہ وہ لبنان کی حمایت اور اس کے استحکام اور خودمختاری پر مرکوز ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین