طالبان کی نقل وحرکت پر ہماری نظر ہے؛افغانستان میں نیٹو فوج کے کمانڈر کا بیان

افغانستان میں نیٹو افواج کے امریکی کمانڈر نے افغانستان کو غیر محفوظ بنانے کے واشنگٹن کے ارادے کا ذکر کیے بغیر اس ملک سے مبینہ طور پر غیر ملکی افواج کے ملک سے انخلا کے وقت طالبان کی نقل و حرکت پر تشویش کا اظہار کیا۔

ولایت پورٹل:افغانستان میں نیٹو افواج کے امریکی کمانڈر جنرل سکاٹ ملر نے اے بی سی نیوز کے ٹیلی ویژن چینل کو دیے جانے والے اپنے انٹرویو میں کہا ہے کہ امریکہ کو طالبان کے حالیہ اقدامات پر تشویش ہونا چاہئے،ملر نے کہا کہ ہمیں تشویش ہونے کی ضرورت ہے کیونکہ طالبان کا اس ملک کے متعدد علاقوں پر قبضہ کرنے کی رفتار پریشان کن ہے جو جنگ کا ایک ظاہری پہلو ہے جبکہ اس کے ساتھ ہی اس میں نفسیاتی اور اخلاقی پہلو بھی موجود  ہیں تاہم اہمیں  امید اور حوصلہ رکھنا بھی ضروری ہے۔
امریکی کمانڈر نے مزید کہا کہ اس وقت آپ  اس ملک کے ایک سرےسے دوسرے سرے تک طالبان کی نقل و حرکت کا مشاہدہ کررہے ہیں لیکن لوگوں کو  ناامید نہیں ہونا چاہیےاور یہ نہیں سوچنا چاہیے کہ انہیں پہلے سے طے شدہ نتیجہ دیا گیا ہے،اسکاٹ ملر نے پہلے بھی دعوی کیا تھاکہ افغانستان سے بین الاقوامی فوج کی واپسی کے خاتمے کے ساتھ اس ملک کا اتحاد ناکام ہونے پر یہاں کی عوام کو "بہت ہی مشکل دنوں" کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔
جنرل ملر نے نیوز کانفرنس کو بتایاکہ اس وقت افغانستان میں سلامتی کی صورتحال ٹھیک نہیں ہے، انہوں نے مزید کہاکہ اگر حالات اسی طرح جاری رہے تو یہاں خانہ جنگی کا بہت زیادہ امکان ہے اور جس کا تصور کیا جاسکتا ہے۔
واضح رہے کہ افغانستان سے امریکی اور نیٹو فوجیوں کے مبینہ انخلا کا آغاز پورے ملک میں جھڑپوں میں اضافے کے ساتھ ہوا جس کو امریکی اپنی مسلسل موجودگی کا جواز پیش کرنے کے بہانے کی حیثیت سے دیکھ رہے ہیں، واشنگٹن کے مطابق بقیہ امریکی فوج 11 ستمبر 2021 تک مکمل طور پر افغانستان سے نکل جائے گی،ملر کا یہ دعویٰ اس وقت سامنے آیا ہے جب ماہرین کا خیال ہے کہ امریکہ نے جان بوجھ کر افغانستان کو فوج کی واپسی اور ایران ، روس اور چین کے مشترکہ مفادات  پر مبنی قدرت کی تقسیم کر کے افغانستان کو اسٹیٹلیس اور خانہ جنگی کی طرف راغب کرنے کے لئے حکمت عملی اپنائی ہے،امریکہ کی اپنی سازش میں کامیابی حاصل کرنے کا مطلب ان تینوں ممالک پر قابو پانا ہوگا  جو واشنگٹن کی پالیسیوں کے مخالف ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین