ہم نے داعش کو شکست دی ہے ،اس کی قیمت دو :امریکی سفارت کار کا عراق سے مطالبہ

ایک امریکی سفارت کار نے کہا ہے کہ کہ اگر عراقی ہم سے اپنی فوج واپس بلانے پر اصرار کرتے ہیں تو انہیں داعش کے ساتھ جنگ کے دوران امریکہ کو ہونے والے تمام نقصان کی بھرپائی کرنا ہوگی۔

ولایت پورٹل:السومریہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اردن کے دارالحکومت امان میں امریکی سفارت خانہ کی اعلی عہدہ دار ساساهار  نے عراق سے امریکی فوجیوں کے نکلنے کے بعد اردن میں جانے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ عراق سے اگر فوجی انخلا ہوگا تو وہ فوجی اردن میں نہیں آئیں گے۔
مذکورہ امریکی سفارتکار نےعراق سے امریکی فوجی انخلاء کا ذکر کرتے ہوئے  مزید کہا کہ  عراق میں امریکی فوج عراقی پارلیمنٹ کے کسی معاہدے کے تحت نہیں آئی  تھی جو اس کی ایک  اور قرارداد کے ساتھ واپس چلی جائے۔
ساساہار نے دعوی کیا کہ ہم  عراق بلکہ  پورے خطے کی سلامتی کو برقرار رکھنے کیے اس ملک میں موجود ہیں  نیز عراق میں ہماری موجودگی ناگزیر ہے اس لیے کہ اگر ہم یہاں سے چلے جائیں گے  عراق ایرانی منصوبوں کو عملی جامہ پہنانے کے میدان میں تبدیل ہوجائے گا۔
اردن میں مقیم  امریکی عہدیدار نے عراق میں موجود امریکی  دہشت گرد فوجوں کو "جمہوریت کا ضامن" قرار دیتے ہوئے عراق کو خانہ جنگی کی دھمکی دی اور کہا کہ اگر ہم عراق سے فوجی انخلاء کرلیں تو اس ملک کی بھی وہی حالت ہوجائے گی جو شام کی ہوئی ہے ،یہاں خانہ جنگی شروع ہوجائے گا اور پورا ملک کھنڈرات میں تبدیل ہوجائے گا اس کے علاوہ ، امریکہ میں عراق کے تمام اثاثے منجمد کردیئے جائیں گے۔
انھوں نے مزید کہا کہ اگر عراقی ہم سے اپنی فوج واپس بلانے پر اصرار کرتے ہیں تو  انہیں داعش کے ساتھ جنگ کے دوران امریکہ کو ہونے والے تمام نقصان کی بھرپائی کرنا ہوگی۔

 




0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین