غزہ جنگ میں ہمیں کچھ حاصل نہیں ہوا:صیہونی فوجی تجزیہ کار

صیہونی فوجی تجزیہ کار نے غزہ کی جنگ میں صیہونی حکومت کی شکست کا ذکر کرتے ہوئے تسلیم کیا کہ اس جنگ میں صیہونی فوج کو حاصل ہونے والی کامیابیاں بہت محدود ہیں۔

ولایت پورٹل:فلسطین الان ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق صیہونی فوجی تجزیہ کار  جوف لیمور نے کہا کہ غزہ پر حالیہ حملے کے دوران  صیہونی فوج کی کامیابیاں بہت محدود ہیں کیونکہ صیہونی عوام کو اپنی فوج سے توقعات بہت زیادہ تھیں اور غزہ میں یہ سب توقعات مٹی میں مل گئیں۔
ویب سائٹ کے مطابق لیمور نے صیہونی فوج کے چیف آف اسٹاف ایویو کوخاوی کے دور میں فوج پر بڑھتی ہوئی تنقید کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ کوخاوی گزشتہ روز اپنے چوتھے اور آخری سال میں داخل ہوئے جبکہ انہیں اندازہ نہیں تھا کہ ان کی صدارت کے اختتام تک فوجی صورت حال ایسی ہو جائے گی کہ فوج آگے بڑھنے کے بجائے بحرانوں کی ایک زنجیر سے نمٹنے پر مجبور ہو جائے گی جو اس کے عظیم الشان منصوبوں پر چھا جائے گی۔
 رپورٹ کے مطابق، کچھ بحرانوں، جیسے کہ کورونا وبائی مرض اور پچھلے دو سالوں میں انتخابات کے پے در پے راؤنڈز نے بجٹ کی منظوری میں رکاوٹ ڈالی ہے نیز کوخاوی  کے منصوبوں پر عمل درآمد میں خلل ڈالا ہے۔
رپورٹ میں مزید آیا ہے کہ  صیہونی مسلح افواج کے سربراہ  کسی کی نصیحت پر کان نہیں دھرتے اور نہ کسی تنقید کو قبول کرتے ہیں بلکہ جو بھی ایسی کوشش کرتا ہے اسے ختم کر دیا جاتا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین