Code : 2367 68 Hit

جنوبی یمن میں اب ہمارا ایک بھی فوجی نہیں ہے؛ متحدہ عرب امارات کا دعوی

متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے کمانڈر نے اعلان کیا ہے کہ ہم نے جنوبی یمن سے مکمل طور پر فوجی انخلاء کر دیا ہے۔

ولایت پورٹل:روسیا الیوم نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی فوجی کمانڈ نے اعلان کیا ہے کہ یمن کے صوبہ عدن میں اماراتی فوج اپنی ذمہ داری انجام دینے کے بعد اس صوبے کو سعودی افواج کے سپرد کرتے ہوئے ہوئے اپنے ملک واپس آگئی ہے ، انہوں نے کہا ہماریہ فوجی انخلاء ایک فوجی اسٹریٹجی کے تحت اور مکمل کامیابی کے ساتھ انجام پایا ہے، فوج کے اس بیانیہ میں یمن کے صوبہ عدن پر متحدہ عرب امارات کے قبضے کوعدن شہر کی آزادی کے نام سے یاد کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ  سعودی اتحاد کے تحت اماراتی فوج ج عدن میں داخل ہوئیں جس کے نتیجے میں اس صوبے کے کئی علاقے حوثیوں کے کنٹرول سے آزاد ہوئے ،بیانیے میں مزید آیا ہے کہ ہماری فوج جنوبی یمن کے دیگر صوبوں میں دہشت گردوں کے خلاف اپنی کارروائی جاری رکھے گی،قابل ذکر ہے متحدہ عرب امارات کی فوجی کمانڈ نے نے یمن میں فوجی مداخلت اور قبضہ کرنے کو یمنی صوبوں کی آزادی کا  نام دیتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کی سربراہی میں عربی اتحاد میں شامل رہتے ہوئے متحدہ عرب امارات اپنے بھائیوں کی حمایت یار جاری رکھے گا، ادھر منصور ہادی کی مستعفی حکومت کے ایک اعلیٰ فوجی عہدیدار نے اماراتی فوجوں کے یمنی صوبوں سے انخلاء کے بارے میں شک و تردید کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ صوبہ عدن سے اماراتی فوجیوں کی عقب نشینی صرف ایک دکھاوا ہے تاکہ وہ یمن میں اپنے حامی مسلح افراد کو پھر سے منظم کر سکیں جن کی اب تک مالی اور تسلیحاتی امداد کرتے آئے ہیں،منصور ہادی حکومت کے اس فوجی عہدہ دار نے مزید کہا کہ عدن اور دیگر صوبوں سے متحدہ عرب امارات کا فوجی انخلا بین الاقوامی افکار کو گمراہ کرنےکی  ایک بڑی چال ہے تاکہ وہ عالمی دنیا کو یہ بتا سکے کہ یمن سے نکل چکے ہیں اور اس کےبعد فرار کے نتائج سے بچ سکے ۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम