ہم ایران پر حملہ نہیں کر سکتے؛صیہونیوں کا کھلا اعتراف

ایک سابق صیہونی انٹیلی جنس افسر نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا کہ ہم ایران پر  حملہ نہیں کر سکتے اگرچہ صیہونی حکام کہتے ہیں کہ اس بیان کے مرتکب عہدہ دارں کے خلاف تحقیقات شروع کرنے اور ان کے خلاف کارروائی کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ انھوں نے اسرائیل کی قومی سلامتی کو نقصان پہنچایا ہے۔

ولایت پورٹل:میڈل ایست ویب سائٹ کی رپورٹ  کے مطابق صہیونی حکام ایران پر حملہ کرنے میں اپنی نااہلی کا اعتراف کرتے ہیں، جن میں سے بعض صیہونی حکومت میں اعلیٰ اور حساس عہدوں پر فائز ہیں،تاہم اس صورتحال  نے اسرائیل کے کچھ سیاسی اور عسکری حلقوں میں غم و غصے کو جنم دیا ہے، جواس طرح کے اعترافات کو اسرائیل کے لیے ایران کے ساتھ محاذ آرائی کے نازک وقت میں ایک سخت دھچکا سمجھتے ہیں۔
میڈل ایسٹ کا کہنا ہے کہ بلاشبہ صیہونی حکومت کے سکیورٹی مراکزان لوگوں کے خلاف کمر کسے ہوئے ہیں جو ایران کے بارے میں صیہونی حکومت کی حقیقت بتانا چاہتے ہیں اور بعض اسرائیلی سیاست دانوں، فوجیوں اور سکیورٹی فورسز کے دعوؤں کو جھوٹا ثابت کرنا چاہتے ہیں۔
یادرہے کہ  بعض صہیونی حکام نے ایران پر حملے میں ناکامی کا جواز پیش کرنے کی کوشش کی اور ایران کی شام میں برسوں سے موجودگی نیز حزب اللہ کی میزائل صلاحیت پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے کہا کہ صیہونی حکومت کو ایران پر حملہ کرنے کی تیاری کے لیے کئی سال درکار ہیں جو دوسرے طریقے سے اس حکومت کی نااہلی کا ایک اور اعتراف  ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین