Code : 3218 14 Hit

ہم عراق سے جانے والے نہیں:یوروپی یونین

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ نے عراق کی تازہ ترین صورتحال کو زیر رکھنے کی خبر دیتے ہوئے اس یونین کے ممبروں کی اس ملک میں موجودگی کا اعلان کیا۔

ولایت پورٹل:یورپی پارلیمنٹ کی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق یوروپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ نے جمعرات کے روز کہا کہ عراق میں حالیہ کشیدگی کے باوجود وہاں یورپی یونین کے دفتر کی سرگرمیاں جاری ہیں۔
یوروپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ ، جوزپ بوریل نے ایک بیان میں کہا ، یورپی یونین عراق میں اپنی موجودگی جاری رکھنے کا عزم رکھتی ہے اور عراق میں اس کے نمائندہ دفتر کے ممبران کام جاری رکھے ہوئے ہیں اور عراق چھوڑنے کا ارادہ نہیں رکھتے ہیں۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ یوروپی یونین عراقی شہریوں کو انسانی حقوق کے اصولوں پر مبنی مناسب تحفظ کے قیام میں مدد کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔
یوروپی یونین کی خارجہ پالیسی کے عہدیدار نے  عراق میں یوروپی یونین کے دفتر کے ممبروں کی صحت کے تحفظ کےلیے کیے جانے والے اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے مزید کہا کہ عراق میں اس تنظیم  کے عملے کی حفاظت ہماری ترجیحات میں شامل ہے۔
بیان کے آخر میں بوریل نے کہا کہ یوروپی یونین عراق میں روزانہ پیش آنے والے واقعات کی نگرانی کر رہی ہے اور اس ملک میں موجود دیگر یورپی ممالک کے ممبروں کے ساتھ تعاون کر رہی ہے۔
واضح رہے کہ یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جبکہ گذشتہ ہفتے عراق میں واقع التاجی امریکہ فوجی اڈے کو درجنوں راکٹوں سے نشانہ بنایا گیا تھا  جس میں دو امریکی اور ایک برطانوی فوجی ہلاک اوردس سے زیادہ افراد زخمی ہوئے تھے۔
جس کے جواب میں امریکی فوجیوں نے کربلا کے زیر تعمیر غیر فوجی ہوائی اڈے کو نشانہ بنایا نیز عراقی فوج اور پولیس کے متععد ٹھکانوں پر بمباری کی۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम