Code : 3126 43 Hit

واشنگٹن ایران پر اقوام متحدہ کی پابندیوں کو پھر سے لاگو کرے: امریکی سینیٹر

امریکی سینیٹ کے ایک رکن نے بدھ کو امریکی حکومت سے اپیل کی ہے کہ وہ ایران پر بین الاقوامی پابندیوں کو پھر سے لاگو کرے۔

ولایت پورٹل:امریکی سینیٹ کے ایک نمائندے نے بدھ کی صبح ایران کے سلسلہ میں سلامتی کونسل کی تازہ ترین رپورٹ پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے  تہران کے خلاف اقوام متحدہ کی پابندیوں کی واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔
امریکی ریپبلکن سینیٹر ٹام کیٹین نے ٹویٹر پر لکھا کہ امریکہ کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل  کی جانب سے  ایران پر لگائی جانے والی پابندیوں کو فوری طور پر اجرا کرنا چاہیے۔
کیٹین کی سفارش ایران کے جوہری معاہدے میں شامل کچھ شقوں کو استعمال کرنے پر مبنی ہے ، جن کی سرگرمی سے ایران پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی پابندیوں کی واپسی ہوسکتی ہے۔
جوہری معاہدے میں ان شقوں کو "تنازعات کو طے کرنے کا طریقہ کار" کہا جاتا ہے ، اور کچھ تجزیہ کاروں نے پابندیوں کو واپس لانے میں ان کے کردار کی بنا پر انھیں "محرک میکانزم" قرار دیا ہے۔
تاہم ، امریکی حکومت گذشتہ سال مئی میں ایران کے ساتھ جوہری معاہدے سے دستبرداری کے سبب اس طریقہ کار کو لاگوکرنے سے قاصر ہے۔
امریکی حکومت میں ایرانی امور کے ترجمان برائن ہک نے حال ہی میں اس بات کا اعتراف کیا تھا کہ اب ہم ایران کے ساتھ جوہری معاہدے میں شامل نہیں ہیں لہذا جو فریق ابھی تک متفق ہیں ان کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ وہ تنازعات کے حل کے میکانزم کو استعمال کرنا چاہتے ہیں یا نہیں۔
انھوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ایران جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کررہا  ہے لیکن یہ فیصلہ ان ممالک کو کرنا ہوگا  جواس معاہدے کے اندر موجود ہیں کہ ایران کے ساتھ کیا سلوک کریں۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम