افغانی شہریوں کا قاتل امریکی جہاز کا عملہ باعزت بری

طالبان کے اقتدار میں آنے پر امریکی C-17 فوجی طیارے کے عملے کو متعدد افغان شہریوں کو جہاز سے گرانے کے جرم سے بری کر دیا گیا۔

ولایت پورٹل:امریکی فضائیہ کا کہنا ہے کہ C-17 فوجی طیارے کے عملے کو طالبان کے اقتدار میں آنے کے بعد اس ملک سے لوگوں کو نکالنے کے دوران متعدد افغان شہریوں کو مار گرانے اور ان کی ہلاکت کی ذمہ داری سے بری کر دیا گیا ہے، امریکی فضائیہ نے فوجی طیارے کے عملے کو بری کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے شہریوں کو مارنے کے لیے کچھ نہیں کیا جو طیارے کے پہیوں سے چمٹے ہوئے تھے۔
امریکی ایئر فورس میگزین کے مطابق ایئر فورس کے ترجمان این سٹیفنیک نے ایک بیان میں کہا کہ امریکی فضائیہ کی سینٹرل کمانڈ کی تحقیقات اور C-17 فوجی طیارے کے عملے کی کارروائیوں کی تحقیقات ایئر فورس کے خصوصی تحقیقاتی بیورو کی جمع کردہ دستاویزات کی بنیاد پر کی گئی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ 16 اگست 2021 کے حادثے میں فوجی طیارے کے عملے کے حالات کو دیکھتے ہوئے، انہوں نے جتنی جلدی ممکن ہو اڑنے کے اپنے فیصلے میں درست طریقے سے کام کیا، اس وقت انہوں نے بہترین فیصلہ کیا۔" فضائیہ نے واقعے کو جواز فراہم کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا، طیارہ ابھی اترا ہی تھا اور ابھی تک اس نے اپنا امدادی سامان اتارا بھی نہیں تھا کہ وہ اچانک ملک چھوڑنے کی کوشش کرنے والے شہریوں کے سیلاب کی زد میں آ گیا۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین