Code : 3752 3 Hit

امریکہ رواں سال میں افغانستان سے 4000 فوجی واپس بلا نے کا ارادہ رکھتا ہے:سی این این

سی این این نے اس موسم خزاں میں افغانستان سے 4000 فوجیں واپس بلانے کے امریکی حکومت کے منصوبے کے بارے میں اطلاع دی۔

ولایت پورٹل:سی این این نے متعدد امریکی عہدے داروں کے حوالے سے بتایا کہ ٹرمپ انتظامیہ نے رواں موسم خزاں میں افغانستان سے 4000 فوجی واپس بلانے کے منصوبے کو حتمی شکل دے دی ہے۔
رپورٹ کے مطابق ،توقع ہے کہ افغانستان میں افغان فوجیوں کی تعداد موجودہ 8600 سے کم ہو کر 4500 ہوجائے گی  جو 2001 میں شروع ہونے والی جنگ کے آغاز کے بعدسے اب تک کی سب سے کم شرح ہے۔
یادرہے کہ یہ فیصلہ اس وقت سامنے آیا ہے جب طالبان نے امریکہ کے ساتھ امن معاہدے پر دستخط کرنے کے باوجود ایک ہی ہفتے میں 800 افغان فوجیوں کو ہلاک اور زخمی کردیاہے۔
سی این این کے مطابق  امریکی وزیر دفاع مارک اسپیئر نے گذشتہ ہفتے برسلز میں اپنے اتحادیوں کے ساتھ نیٹو کے اجلاس کے موقع پر اس منصوبے پر تبادلہ خیال کیا اور انہیں اس فیصلے سے آگاہ کیا۔
ادھر نیٹو کے سکریٹری جنرل نے جمعہ کو کہا ہے کہ نیٹو نے اپنی موجودگی امن کی حمایت میں قائم کردی ہے اور یہ دوسرے اتحادیوں کے ساتھ ہم آہنگی کے ساتھ کیا جائے گا۔
یادرہے کہ افغان امن معاہدے کے تحت امریکہ ابتدائی طور پر8600 فوجی افغانستان سے نکالے گا اور اس کے 14 ماہ بعد مکمل طور پر افغانستان سے باہر ہو جائے گا ۔
امریکی حکام نے اعلان کیا ہے کہ  یہ معاملہ افغانستان کے حالات اور طالبان کے امن معاہدے کے عزم کی بنیاد پر اٹھایا جائے گا۔
امریکہ کے یہ اظہار خیالات ایسے وقت سامنے آئے ہیں جب گذشتہ روز افغان صدر نے اعلان کیا تھا کہ امریکی افواج کے کسی بھی غیر ذمہ دارانہ انخلا سے ملک میں امن کے عمل پر سخت اثر پڑے گا۔
 






0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین