Code : 3328 176 Hit

امریکہ کو ایران پر عائد پابندیاں ہٹا دینا چاہیے:پوپ فرنسس

واٹیکن کے وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ دنیا بھر کے کیتھولک عیسائیوں کے رہنما پوپ فرنسس نے امریکہ سے کورونا وائرس سے ہونے والے نقصان کی وجہ سے ایران کے خلاف عائدپابندیوں کو ہٹانے کے بارے میں بات کی ہے۔

ولایت پورٹل:پریس ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق واٹیکن کے وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ دنیا بھر کے کیتھولک عیسائیوں کے  رہنما پوپ فرنسس نے ایران کی درخواست کے بعد امریکی عہدیداروں سے مطالبہ کیا کہ وہ کورونا وائرس کے پھیلنے پر ایران پر عائد پابندیاں ختم کریں۔
رپورٹ کے مطابق واٹیکن کے وزیر خارجہ پیٹرو پارولن نے اقوام متحدہ میں امریکی مندوب  کیلی کرافٹ کو فون کرکے پوپ فرنسس کا پیغام پہنچاتے ہوئے کہا واشنگٹن ایران کے خلاف  عائدپابندیوں کو ختم کرے۔
واضح رہے کہ حال ہی میں حوزہ علمہ قم کے سربراہ آیت اللہ اعرافی پوپ فرنسس کو ایک خط لکھا  جن میں کورونا وائرس پھیلنے پر  پوری دنیا کے مذہبی مراکز  کی جانب سے تمام مذاہب اور اقوام کے ساتھ ہمدردی رکھنے کا مطالبہ کیا۔
آیت اللہ اعرافی کے خط کے  جواب میں پیٹرو پارولن نے لکھا ہے کہ پوپ نے خط کی تفصیلات جاننے کے بعد انہیں ایرانی عوام کے ساتھ اپنی روحانی ہمدردی کا اظہار کرنے کو کہا۔
پیٹرو پارولن نے مزید لکھا کہ چونکہ آیت اللہ اعرافی نے پوپ فرنسس سے مطالبہ کیا کہ   ایران کے خلاف امریکی پابندیوں نے اس ملک کی عوام کو کورونا وائرس کا مقابلہ کرنے میں مشکلات دوچار کیا ہوا ہے لہذا واٹیکن اس سلسلہ میں اپنے موقف کا اظہار کرے جس کے بعد واٹیکن سے واشنگٹن سے اس اپیل کی کہ ایران کے خلاف عائد پابندیوں کے بارے میں غور کرے۔
قابل ذکر ہے کہ اب تک پوری دنیا کی متعدد اعلی شخصیات کے علاوہ کئی ممالک نے بھی امریکہ سے مطالبہ کیا ہے کہ  موجود صورتحال میں ایران کے خلاف عائد پابندیوں کو ہٹا دے لیکن امریکی حکام کے کان پر جوں تک نہیں رینگی۔



0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम