امریکی حکام کو چین کی ٹیکنالوجی صلاحیت پر تشویش

امریکی سینیٹ اور امریکی ایوان نمائندگان کے رہنماؤں نے بدھ کو اعلان کیا کہ امریکی ٹکنالوجی کی مسابقت کو بڑھانے کے بل پر حتمی معاہدے تک پہنچنے کے لیے چین کے ساتھ بات چیت کریں گے۔

ولایت پورٹل:امریکی کانگریس کی  نیوز ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق چونکہ امریکہ اور چین کے درمیان مختلف شعبوں بالخصوص ٹیکنالوجی اور اقتصادی اور تجارتی مسائل پر اختلافات بڑھتے جارہے ہیں جس کے بعد سینیٹ اور ایوان کے رہنماؤں نے بدھ کو اعلان کیا کہ قانون ساز اس معاملے پر کسی حتمی معاہدے تک پہنچنے کے حق میں ہیں جس کے لیے وہ  ایسے بل جو چین کے ساتھ امریکی ٹیکنالوجی کی مسابقت میں اضافہ کرے گا کے بارے میں مذاکرات اور مشاورت کر رہے ہیں۔
امریکی سینیٹ کے اکثریتی رہنما چک شومر اس بل کو 750 بلین ڈالر کے مجوزہ امریکی دفاعی پالیسی بجٹ میں شامل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں،انہوں نے امید ظاہر کی کہ یہ بل سینیٹ اور ایوان نمائندگان سے منظور ہو جائے گا اور جو بائیڈن بھی اس پر دستخط کردیں گے،بل میں ریاستہائے متحدہ میں سیمی کنڈکٹر کی پیداوار بڑھانے کے لیے $52 بلین کا بجٹ شامل ہے۔
واضح رہے کہ  یہ بل چین کے خلاف امریکی ٹیکنالوجی اور تحقیقی صلاحیتوں کو مضبوط کرنے کے لیے 190 بلین ڈالر فراہم کرے گا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین