Code : 4039 9 Hit

مشرق وسطی میں موجود امریکی فوجی اڈے ایرانی میزائلوں کی زد میں ہیں:چین

چین کا کہنا ہے کہ ایران کے میزائل رینج کے اندر موجود امریکی فوجی اڈوں پر ایران کی جانب سے کسی بھی وقت میزائل حملے کا خطرہ ہے۔

ولایت پورٹل:چائنہ انٹرنیشنل ریڈیو  نےسپاہ پاسداران کی بحریہ اور فضائیہ کی  جانب سے مشترکہ طور پر خلیج فارس اور آبنائے ہرمز کے مغرب میں منعقد ہونے والی پیغمبر  اکرم 14  فوجی مشقوں پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان مشقوں میں جو قابل ذکر بات دیکھنے میں آئی وہ یہ تھی کہ سپاہ پاسداران نے امریکی نیمٹز کلاس طیارہ بردار بحری جہاز کی نقل کو مشقوں کے پانیوں میں منتقل کیا اور میزائل فائر کرکے اسے تباہ کردیا۔
اگرچہ تہران نے ہمیشہ اس بات پر زور دیا ہے کہ خلیج فارس کی سلامتی کو خطے کے ممالک کو برقرار رکھنا چاہئےلیکن امریکہ نے ہمیشہ خلیج فارس میں اپنے بیڑے کےگشت کرنے پر اصرار کیا ہے تاہم امریکی آئزن ہاور طیارہ بردار بحری مشن اب مکمل ہوچکا ہے اور اس نے اپنا مشن نمٹز کلاس طیارہ بردار بحری جہاز کے حوالے کیا ہے  جو حال ہی میں بحیرہ جنوبی چین میں ہندوستان کے ساتھ مشترکہ مشقیں مکمل کرنے کے بعد بحر ہند سے مشرق وسطی کے پانیوں میں داخل ہوا ہے۔
درایں اثناایران کی جانب سے نمٹز کلاس طیارہ بردار بحری جہاز کی نقل کو حالیہ مشقوں کےبحری علاقے میں منتقل کرنے کے اقدام کے بعد  بہت سارے غیر ملکی ذرائع ابلاغ  خصوصا مغربی میڈیا نے پیغمبراکرمؐ کی 14 ویں مشقوں کے اس حصے پر توجہ دی ہےجبکہ ایرانی میڈیا ہے ان مشقوں کو کوریج دیتے ہوئے  ان میں سپاہ پاسداران کی میزائل صلاحیت اور اس میں اضافہ ہونے کے کو اپنی توجہ کا مرکز بنایا ہے،یادرہے کہ چین نے ان مشقوں کے سلسلہ میں اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کہ مشرق وسطی میں زیادہ تر امریکی فوجی اڈے بھی ایران کے میزائل حملے کی زد  میں ہونے کا امکان ہے۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین