کربلا کے زیرتعمیر ائرپورٹ پر امریکی بمباری

امریکی جنگی طیاروں نے جمعہ کی صبح عراق کے الحشد الشعبی اڈے اور کربلا میں زیر تعمیر ائیرپورٹ پر بمباری کی۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابقجمعہ کی صبح امریکی جنگجوؤں نے صوبہ بابل کے جرف الصخرمیں عراقی حزب اللہ کے اڈے پر بمباری کی۔
دو امریکی عہدیداروں نے کہا کہ عراق میں امریکی اور برطانوی افواج پر ہونے والےحملے کے بعد یہ امریکہ حملے امریکہ کی جانب سے انتقامی کاروائی کے طور پر کیے گئے ہیں۔
المیادین نیوز چینل نے یہ بھی اطلاع دی ہے کہ جرف الصخر اور السعیدات کے علاقوں میں کم سے کم تین فضائی حملے کیے گئے ہیں جن میں ایک طبی مرکز اور ایک فوجی اڈے پر  بھی بمباری کی گئی ۔
ذرائع ابلاغ نے یہ بھی اطلاع دی ہے کہ امریکی جنگی جہاز شہربابل کے کی فضا میں پرواز کررہے ہیں۔
الجزیرہ نیوز چینل نے بھی دعوی کیا ہے کہ صلاح الدین ، بابیل ، بصرہ اور کربلا صوبوں   میں الحشد الشعبی سے وابستہ  نشانہ بنایا گیا ہے۔
ذرائع  ابلاغ نے یہ بھی بتایا کہ امریکی جنگی طیاروں  نے کربلا کے زیر تعمیر ہوائی اڈے پر بھی بمباری کی ہے اوراس صوبے میں واقع خان النص کے علاقے کی فضا میں  پرواز کر رہے ہیں۔
عراقی ذرائع  ابلاغ نے بتایا کہ کربلا کے زیر تعمیر ہوائی اڈے پر امریکی بمباری کے نتیجہ میں ہوائی اڈے کا عملہ کا ایک ملازم جاں بحق ہوا ہے۔
امریکی محکمہ دفاع کے ایک عہدیدار نے بتایا ہے کہ یہ حملے جنگی طیاروں کے ذریعہ  کیے گئے ہیں نہ کہ ڈرونوں کے ذریعہ  اور ان میں الحشد الشعبی کے زیادہ تر ان ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا ہے جہاں فوجی ساز وسامان تھا۔
یاد رہے کہ عراقی میڈیا نے گذشتہ رات خبر دی تھی کہ بغداد کے شمال میں واقع  امریکی فوجی اڈے التاجی  پر دس سے زیادہ کٹیوشا  راکٹ فائر کیے گئے ۔
 امریکہ نے یہ دعوی کرتے ہوئے کہ یہ عراق میں حزب اللہ کا کام ہے، اعلان کیا  کہ التاجی پر ہونے والے حملہ میں 3امریکی فوجی ہلاک اور 12زخمی ہوگئے ہیں۔




1
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین