امریکہ کی متحدہ عرب امارات کو ہتھیاروں کی فراہمی

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ  یہ ملک یمنی فورسز کے حملوں کا مقابلہ کرنے کے لیے متحدہ عرب امارات کو کئی لڑاکا طیارے اور تباہ کن طیارے بھیجنے کا ارادہ رکھتا ہے۔

ولایت پورٹل:رشیا ٹوڈے کی رپورٹ کے مطابق واشنگٹن نے یمنی افواج کے حملوں کا مقابلہ کرنے میں متحدہ عرب امارات کی مدد کے لیے گائیڈڈ میزائل لے جانے والے لڑاکا طیارے اور تباہ کن طیارے ابوظہبی بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے، عرب خلیجی ریاستوں کے لیے امریکی وفد نے آج (بدھ) ایک بیان جاری کیا،رپورٹ کے مطابق، پینٹاگون کی جانب سے متحدہ عرب امارات کی حمایت میں کیے گئے اقدامات میں فضائی دفاع کے شعبے میں تعاون جاری رکھنا بھی شامل ہے، جس میں متحدہ عرب امارات کی بحریہ کے ساتھ تعاون کے لیے یو ایس ایس کول ڈسٹرائر کی تعیناتی بھی شامل ہے۔
واضح رہے کہ  یہ فیصلہ اس وقت سامنے آیا ہے جب امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے اس سے قبل ابوظہبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زائد آل نہیان اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے کمانڈر انچیف کے ساتھ اس ملک پر یمنی حملوں کے بارے میں ٹیلی فون پر بات کی تھی، فون کال میں آسٹن نے پینٹاگون کی جانب سے متحدہ عرب امارات کی حمایت کے لیے کیے گئے اقدامات کا جائزہ لیا۔
یادرہے کہ یمنی مسلح افواج نے سعودی عرب کی قیادت میں جارحیت کے جواب میں دو ہفتوں کے دوران متحدہ عرب امارات پر تین بار حملہ کیاجن میں اس ملک کے اہم اور اسٹریٹیجک مقامات کو نشانہ بنایا، تازہ ترین حملہ جسے آپریشن یمنی طوفان 3 کے نام سے جانا جاتا ہے، اسرائیلی صدر اسحاق ہرزوگ کے یو اے ای کے دورے کے موقع پر کیا گیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین