Code : 2636 35 Hit

امریکہ کا عراق میں اپنے سفارتکاروں میں کمی لانے کا اعلان

امریکی وزیر خارجہ نے امریکی کانگریس کو لکھے گئے خط میں نمائندوں کو بتایا ہے کہ وہ عراق میں اپنے سفارتکاروں کی تعداد میں نمایاں کمی لائیں گے۔

ولایت پورٹل:امریکی میگزین فارین پالیسی نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے حال ہی میں کانگریس کو لکھے گئے ایک خط میں کہا ہے کہ عراق میں امریکی سفارتی موجودگی میں نمایاں کمی واقع ہوگی،رپورٹ کے مطابق سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کو لکھے گئے خط میں پومپؤ نے عراق میں امریکی سفارتی ٹیم کے متعدد ممبروں کے مستقل انخلا کے منصوبے کا تفصیل سے ذکر کیاہے،اس پروگرام کے مطابق 2020ء کے آخر تک عراق کے دار الحکومت بغداد میں واقع امریکی سفارتخانہ اور دیگر سفارتی مراکز جیسے اربیل میں واقع قونصل خانہ میں امریکی سفارتکاروں کی تعداد 486 سے کم ہوکر349 افراد رہ رہ جائے گی جس کا مطلب یہ ہوا کہ عراق میں امریکی سفارتکاروں کی تعداد میں 28% کمی واقع ہوگی،پومپؤ کی جانب سے ا مریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے چیئرمین جیمس ریش کو لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ امریکہ عراق میں اپنے سفارتی مراکز میں سفارتکاروں  کی تعداد میں کمی  کرکے بھی اپنے اہداف حاصل کرسکتا ہے اور اپنے نگرانی کے پروگراموں پر عمل درآمد کرسکتا ہے،تاہم ، فارین پالیسی  نے  ناقدین اور متعدد ڈیموکریٹس کے حوالے سے لکھا ہے عراق سے امریکی سفارتکاروں کی کمی  اس ملک میں ایران کے بڑھتے  اثر و رسوخ اور وہاں پیدا ہونے والے عدم استحکام کی بنا پر ہے،قابل ذکر ہے کہ پومپؤ نے رواں سال کے شروع میں ایران سے خطرے  کے بہانے عراق  امریکی سفارتی مراکز میں تعینات  غیر ضروری امریکی فوجیوں کے انخلا کا حکم دیا تھا اور سفارتکاوں میں کمی لانے کی بات کررہے ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین