امریکہ کا پھر سے طالبان کے ساتھ مذاکرات شروع کرنےکا اعلان

امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان نے اپنے نمائندے کے دو ہفتے کے دورہ قطر اور افغانستان میں دہشت گردی کے خلاف جنگ سمیت مختلف امور پر طالبان کے ساتھ مذاکرات کی بحالی کا اعلان کیا۔

ولایت پورٹل:امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان نیڈ پرائس نے کہا کہ واشنگٹن آئندہ ہفتے قطر میں طالبان کے ساتھ مذاکرات دوبارہ شروع کرے گا،امریکی دفتر خارجہ کی ترجمان نے اے ایف پی کو  بتایا کہ افغانستان کے لیے امریکی ایلچی ٹام ویسٹ دو ہفتے کے دورے پر امریکی وفد کی قیادت کریں گے، پرائس نے مزید کہا کہ انسداد دہشت گردی کے مسائل کے علاوہ امریکہ افغانستان کے انسانی بحران سے متعلق مسائل کو بھی حل کرے گا۔
ا مریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان نے کہا کہ ملاقات میں اہم قومی مفادات پر توجہ مرکوز کی جائے گی جس میں داعش اور القاعدہ کے خلاف آپریشن، انسانی امداد، افغانستان کی دیوالیہ معیشت، اور امریکی شہریوں اور افغانوں کا محفوظ انخلاء جو امریکہ کے ساتھ کام کرتے رہے ہیں،جیسے موضوعات شامل ہیں۔
واضح رہے کہ  اس سے قبل افغانستان کے لیے امریکہ کے خصوصی نمائندے تھامس ویسٹ نے کہا تھا کہ ان کا ملک داعش کے حملوں میں اضافے اور افغانستان میں القاعدہ کی موجودگی پر شدید فکر مندہے، تھامس ویسٹ نے برسلز میں یہ ریمارکس دیتے ہوئے مزید کہا کہ واشنگٹن چاہتا ہے کہ طالبان افغانستان میں داعش کو شکست دیں۔
 افغانستان کے لیے امریکی خصوصی ایلچی نے مزید کہا کہ واشنگٹن اس وقت طالبان کے ساتھ انٹیلی جنس مذاکرات کے ایک اور دور کی تیاری کر رہا ہے، انہوں نے کہا کہ امریکہ اور طالبان کے درمیان مذاکرات کا ایک اور دور قطر کے شہر دوحہ میں ہوگا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین