Code : 2558 35 Hit

امریکی انٹرنیٹ ٹیکسیوں میں جنسی زیادتی کے حیران کن اعدادوشمار

ایک امریکی ٹریول ایجنسی کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پچھلے ایک سال کے دوران انٹرنیٹ ٹیکسیوں میں جنسی زیادتی کے 3000 سے زائد واقعات پیش آئے ہیں جن میں بعض موقعوں پر ہونے والی جھڑپوں میں 19 موتیں ہوئیں ہیں۔

ولایت پورٹل:واشنگٹن پوسٹ اخبار کی رپورٹ  کے مطابق امریکی  آن لائن ٹیکسی کمپنی اوبر نے پہلی بار انکشاف کیا ہے کہ پچھلے  ایک سال میں  امریکی ڈرائیوروں کے ذریعہ  سفر کے دوران مسافروں کی عصمت دری اور حملہ کے3،000 سے زائد واقعات پیش آئے ہیں،قابل ذکر ہے کہ یہ واقعات اس ایجنسی کے سکیورٹی مطالعہ کا صرف ایک حصہ ہیں جنہیں بہت زیادہ دباؤ کے بعد منظر عام پر لایا گیا ہے،اس تفصیلی رپورٹ میں جنسی زیادتی کے واقعات کو21حصوں  میں تقسیم کیا گیا ہے  جن میں سے  صرف 5 انتہائی سنگین معاملوں پر توجہ مرکوز کی گئی ہے،اوبر کا کہنا ہے کہ ہمارے پاس  ڈرائیوروں یا مسافروں کے ذریعہ پیش آنے والے  عصمت دری کے ہزاروں واقعات کی تفصیلات موجود ہیں،اوبر لا آفس کے چیف ٹونی ویسٹ کا کہنا ہے کہ جنسی زیادتی جیسے مسائل کو مزید واضح کرنے کی ضرورت ہے  اور اب وقت آگیا ہے کہ متعدد  کمپنیاں ان کو  مدنظر رکھیں اورانھیں  ختم کرنے کے لئے مل کر کام کریں،واضح رہے کہ اوبر ایسی ٹریول ایجنسی ہے جس کے پاس پوری دنیا میں لگ بھگ4 ملین ڈرائیور ہیں، کمپنی کا ڈھانچہ ایسا ہے جو زیادہ تر اپنے ملازمین کی ذمہ داری قبول نہیں کرتا ہے،تاہم  اوبر کا کہنا ہے کہ انھوں نے اپنے عملے کے ریکارڈوں کا جائزہ لے کر گذشتہ دو سالوں میں ایک ملین سے زیادہ ڈرائیوروں کو برطرف کردیا ہے،ماہرین کا کہنا ہے کہ  جنسی زیادتی کی اطلاعات ہمیشہ اصل  سے کم ہی تعداد میں منظر عام پر لائی جاتی ہیں ۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम