ایرانی جوہری سائنسدان کی شہادت پر اقوام متحدہ کا ردعمل

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے ایرانی جوہری سائنسدان "محسن فخری زادہ" کے قتل پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے تمام فریقوں سے تناؤ میں اضافے کو روکنے کی درخواست پر ہی اکتفا کیا!

ولایت پورٹل: اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گٹیرس نے جمعہ کے روز ایرانی جوہری سائنسدان محسن فخری زادے کے قتل پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے تمام فریقوں سے تحمل کا مطالبہ کیا، رپورٹ کے مطابق ، اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کے ترجمان ، فرحان حق نے کہا ، "ہمیں تہران کے قریب ایرانی جوہری سائنسدان کے قتل کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں، ہم تمام فریقوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ  جذبات پر قابو رکھیں اور خطے میں کشیدگی بڑاھنے والی کسی بھی کارروائی سے باز رہیں۔
یادرہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت دفاع اور مسلح افواج کی معاونت نے جمعہ کی شام ایک دہشت گرد کارروائی میں نائب وزیر اور دفاعی تحقیق و انوویشن آرگنائزیشن (سپند) کے سربراہ محسن فخری زادہ کی شہادت کی تصدیق کی، بیان میں کہا گیا ہے کہ جمعہ کی سہ پہر کو مسلح دہشت گرد عناصر نے وزارت دفاع کی ریسرچ اینڈ انوویشن آرگنائزیشن کے سربراہ محسن فخری زادہ کی کار پر حملہ کیا، ان کی سکیورٹی ٹیم اور دہشت گردوں کے مابین تصادم کے دوران محسن فخری زادہ شدید زخمی ہوئے اور اسے اسپتال لے جایا گیاجہاں بدقسمتی سے ، میڈیکل ٹیم انھیں بچانے میں کامیاب نہیں ہوسکی  اور اس طرح  اس ملک کے خادم اور عظیم سائنسدان  برسوں کی جدوجہد کے بعد شہادت کے اعلی درجہ پر فائز ہوگئے۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین