بغداد میں لگاتار دو خودکش دھماکے؛28افراد ہلاک،74زخمی

عراقی ذرائع نے جمعرات کے روز اس ملک کےدارالحکومت کے ایک پرہجوم بازار میں خودکش بم دھماکوں کی اطلاع دی ہے جس میں دسیوں افراد ہلاک اور زخمی ہوئے۔

ولایت پورٹل:بغداد الیوم  کی رپورٹ کے مطابق عراقی  سکیورٹی ذرائع نے آج اس ملک کے دارالحکومت بغداد میں دو خودکش بم دھماکوں کی اطلاع دی، عراقی سکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ سکیورٹی فورسز اور ایمبولینسیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئی ہیں، ایک عراقی سکیورٹی ذرائع نے بتایاکہ ایک کے بعد دوسرا دھماکہ  ہوا جب دہشت گرد دھماکہ  خیز بیلٹ پہنے اس علاقے میں داخل ہوئے اور خود کو بھیڑ میں اڑا لیا ، ان دھماکوں کے نتیجے میں اب تک 28 افراد ہلاک اور 75 دیگر زخمی ہوئے ہیں، عراقی وزارت داخلہ کے ترجمان ، خالد المحنا نے بتایا کہ ابتدائی طور پر ہلاکتوں کی تعداد 13 اور 28 زخمی تھی ، جو حتمی نہیں تھی اور اس میں اضافہ ہونے کا امکان ہے،ا ن دہشت گردانہ کارروائیوں کی تفصیلات کے بارے میں  انہوں نے کہاکہ  خود کش حملہ آور نے پہلے بیمار ہونے کا دعوی کرنے کے بعد اپنے آس پاس کے لوگوں کو جمع کیا اور پھر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔
 دوسرے خودکش بمبار نے خود کو اس وقت دھماکے سے اڑا لیا جب لوگ پہلے دھماکے میں  ہونے والے زخمیوں کو طبی مراکزلے جانے کے لئے جمع تھے، دھماکے کی ویڈیو فائل جائے وقوعہ سے جاری کی گئی جب عراقی شہری باب الشرقی (البلا) مارکیٹ میں موجود تھے ، جس کے بعد پہلے دھماکے کے بعد عراقی علاقے میں جمع ہونے کے بعد دوسرا دھماکہ ہوا۔
عراقی سکیورٹی کے ایک سینئر ذرائع نے خونی دھماکوں کے بعد سکیورٹی کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے آج کے دھماکوں کے بعد مشترکہ آپریشن کمان کے صدر دفتر میں ایک اعلی سطحی اجلاس کا اعلان کیا اور زور دیاکہ کمانڈر اس وقت دو خودکش بم دھماکوں کے بعد ایک اجلاس میں ہیں، ادھر عراقی پارلیمنٹ کی سلامتی اور دفاع کمیٹی کے ایک رکن ، عبدالخالق العزاوی نے ، بغداد کے قلب میں واقع چوراہے  پر ہونے والے خودکش بم دھماکوں کے بعد جمعرات کو عراقی قومی سلامتی کونسل کا فوری اجلاس طلب کرلیا۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین