Code : 2986 32 Hit

افغانستان میں دو امریکی فوجی دہشگرد ہلاک،چھ زخمی

امریکہ نے گذشتہ روز افغانستان کے شہر ننگرہار میں ایک اڈے پر ہونے والے حملے میں دو امریکی فوجیوں کے ہلاک اور چھ کےزخمی ہونے کی تصدیق کی ہے ۔

ولایت پورٹل:الجزیرہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق افغانستان میں امریکی فوج کے کمانڈر نے جمعہ کی شام اعلان کیا کہ ننگرہار میں امریکی فوجیوں پر حملہ ہوا ہے۔
جس کے بعد اگلے دن امریکہ نے تصدیق کی  کہ اس جھڑپ میں دو امریکی فوجی ہلاک اور چھ دیگر زخمی ہوئے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق امریکی فوج کی جانب سےجاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ کچھ اطلاعات سے ظاہر ہوتا ہے کہ افغان مسلح افواج کی وردی میں ملبوس ایک شخص نے امریکی فوجیوں پر فائرنگ کی۔
یادرہے کہ یہ حملہ اس وقت ہوا جب نیٹو کے کچھ ممبر ممالک اس وقت افغانستان سے اپنے ہزاروں فوجیوں کے انخلا کرنے کے لئے غور کر رہے ہیں نیز  امریکہ نے وہاں تعینات اپنی فوج میں کمی کرنے کا ارادہ کیا ہے۔
اسی سلسلہ میں نیویارک ٹائمز نے بدھ کو اپنی ایک رپورٹ میں لکھا تھا کہ ٹرمپ انتظامیہ کی جانب سے افغانستا ن میں اپنی فوج میں کمی کرتے ہوئےان کی تعداد 12000 سے گھٹا کر8500 کرنے کے فیصلہ کے بعد نیٹو کے رکن 29ممالک چہ میگوئیاں ہورہی ہیں۔
اگرچہ کچھ ممالک کا خیال ہے کہ انہیں افغانستان میں فوجیوں کی تعداد کو کم کرنا چاہئے ، لیکن جرمنی اور اٹلی جیسے  کچھ دوسرے ممالک کا خیال ہے  کہ وہ کچھ مخصوص شرائط کے تحت اپنی افواج کو اس ملک میں  باقی رکھ سکتے ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ اسی سلسلہ میں افغانستا نیشنل کانفرانس کے سربراہ نے لطیف پدرام نے ، ملک اور پورے خطے میں امریکی فوج کی غیر قانونی موجودگی پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے اس بات پر اصرار کیا کہ امریکہ کو خطے سے جانا چاہئے اورپورے خطہ کے مسلمانوں کو چاہیے کہ وہ اس بے لگام امریکہ پر لگام کستے ہوئے اس کے خلاف متحد ہوجائیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین