صیہونی دہشتگردوں کے ہاتھوں حماس کے 2 رہنما گرفتار

اسرائیلی فوج نے پیر کی صبح مغربی کنارے پر چھاپہ مارا اور حماس کے دو رہنماؤں سمیت 19 فلسطینیوں کوگرفتار کیا۔

ولایت پورٹل:فلسطین ٹوڈے کی رپورٹ کے مطابق صہیونی ملیشیا مقبوضہ علاقوں میں مقیم فلسطینیوں کے خلاف اپنی معاندانہ کاروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں، صہیونی عسکریت پسندوں نے مغربی کنارے کے کچھ حصوں میں بڑے پیمانے پر حملے شروع کردیئے ہیں، رپورٹ کے مطابق ، صیہونی عسکریت پسندوں کے فلسطینیوں پر بڑے پیمانے پر حملے کے بعد مغربی کنارے میں ایک شدید تصادم ہوا۔
صیہونیوں نے فلسطینیوں کے خلاف گولیوں اور آنسو گیس کا استعمال کیا، صیہونی فورسز نے تنازعہ کے دوران 19 فلسطینیوں کو حراست میں لیا، حراست میں لیے جانے  والوں میں حماس کے دو رہنما عبدالرحیم حنبلی اور مصطفیٰ نشار بھی شامل ہیں ،یادرہے کہ  فلسطینی قیدیوں کے امور کی نگراں کمیٹی نے حال ہی میں مقبوضہ علاقوں میں فلسطینی شہریوں کے خلاف صیہونی حکومت کے جابرانہ اقدامات کے بارے میں ایک بیان جاری کیا، اس سلسلے میں  فلسطینی قیدیوں کے بارے میں تحقیقاتی کمیٹی نے اس بات پر زور دیا کہ صہیونی حکومت کی فورسز نے جنوری میں مقبوضہ علاقوں میں 456 فلسطینی شہریوں کو حراست میں لیا۔
 کمیٹی نے یہ بھی اعلان کیا کہ صہیونیوں نے جنوری میں فلسطینیوں کے خلاف 105 عارضی نظربندی کے احکامات جاری کیے،یادرہے کہ ایک طرف صیہونی درندے فلسطینیوں  کو جس طرح چاہتے ہیں اپنی بربریت کا نشانہ بناتے  جارہے ہیں ، جب چاہیں ان کے مکانوں کو گرا دیتے ہیں یا انھیں فوجی کیمپ میں تبدیل کر دیتے ہیں،ان کے کھتوں پر قبضہ کر لیتے ہیں اور دوسری طرف کچھ شیخ نشین عرب ریاستوں کے حکمراں اس غیر قانونی ریاست کے ساتھ  اپنے تعلقات بحال کرنے کے لیے ایک دوسرے سے سبقت لے جانے کی کوششوں میں لگے ہوئے  تاکہ امریکہ ان سے خوش ہو جائے اس میں سعودی عرب ، بحرین اور متحدہ عرب امارات پیش پیش ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین