Code : 3018 21 Hit

ترکی ہمارے اندرونی معاملات میں مداخلت بندکرے:ہندوستان

ہندوستانی وزارت خارجہ نے ترک صدر کے کشمیر کے بارے میں کل کے تبصرے کے جواب میں ہندوستان کے داخلی معاملات میں انقرہ کی مداخلت کو روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔

ولایت پورٹل:نیوز18 ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق ترکی کے صدر رجب طیب اردغان نے کل مسئلہ کشمیر کے بارے میں پاکستان کے موقف کے لئے اپنے ملک کی حمایت کا وعدہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ مسئلہ ترکی اور پاکستان دونوں ممالک کے لیے باعث تشویش ہے۔
ارغان  کے اس بیان کے بعد ہندوستانی وزارت خارجہ نے ایک بیان جاری کیا جس میں ترک صدر کی ہندوستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی مذمت کی گئی  ہے اور اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ پاکستان نے جموں و کشمیر میں دہشت گردی کے معاملے کو تقویت بخشی ہے۔
ہندوستانی وزارت خارجہ کے بیان میں آیا ہے کہ ہندوستان جموں و کشمیر کے بارے میںاردگان کے تمام بیانات کو مسترد کرتا ہے ،کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ اور ناقابل جدا حصہ ہے۔
بیان میں مزید آیا ہے کہ ہم ترک حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ہندوستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت نہ کریں اور پاکستان سے ہندوستان اور خطے تک پہنچے والی دہشت گردی کے سنگین خطرہ سے متعلق حقائق سے بخوبی آگاہ ہوں۔
یادرہے کہ ترک صدر نے کل  قومی اسمبلی اور سینیٹ آف پاکستان کے مشترکہ اجلاس میں مسئلہ کشمیر کے بارے میں پاکستان کے موقف کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو انصاف اور عدالت کی بنیاد پر حل کرنا ضروری ہے۔
واضح رہے کہ اردگان نے گذشتہ سال بھی   اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب میں مسئلہ کشمیر کو اٹھایا تھا جس پر ہندوستان نے یہ کہتے ہوئے رد عمل کا اظہار کیا تھا کہ اسے کشمیر کے بارے میں ترکی کے تبصرے پر انتہائی افسوس ہے۔



0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین