ترکی کا 9 سال بعد مصر کے ساتھ سفارتی تعلقات بحال کرنے کا فیصلہ

 ترکی نے قاہرہ میں نئے سفیر کا انتخاب کرتے ہوئے نو سال بعد مصر کے ساتھ سفارتی تعلقات بحال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ولایت پورٹل:دو ترک حکام نے مڈل ایسٹ آئی ویب سائٹ کو بتایا کہ انقرہ نے قاہرہ میں نئے سفیر کی تقرری کرکے اپنے نو سالہ سفارتی خلا کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے، باخبر ذرائع نے اس نیوز سائٹ کو دیے گئے ایک انٹرویو میں دعویٰ کیا کہ 2015 سے 2020 کے درمیان اسلامی تعاون تنظیم میں ترکی کی نمائندگی کرنے والے صالح موتلو سین کو قاہرہ میں انقرہ کا نیا سفیر مقرر کیا جانا ہے۔
باخبر ذرائع کے مطابق ترک وزیر خارجہ مولود چاووش اوغلو نے صالح متلو سین کو اس فیصلے سے آگاہ کیا اور انقرہ اب مصری حکومت سے منظوری طلب کر رہا ہے، یاد رہے کہ انقرہ اور قاہرہ کے درمیان تعلقات 2013 میں مصر میں ہونے والی بغاوت کے بعد سے کشیدہ ہیں جس نے محمد مرسی کو معزول  کرکے موجودہ صدر عبدالفتاح السیسی اقتدار میں آئے تھے۔
واضح رہے کہ ترک صدر رجب طیب اردگان عبدالفتاح السیسی کی حکومت کے سخت ناقد رہے ہیں اور ان پر بغاوت کے بعد اخوان المسلمین کے رہنماؤں کے خلاف انسانی حقوق کی ورزی کا الزام لگایا ہے۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین