Code : 3244 188 Hit

ترکی نے شام کے شہر الحسکہ کا پانی بند کرکے 5لاکھ شہریوں کی زندگی خطرے میں ڈال دی ہے: یونیسف

یونیسف کا کہنا ہے کہ ترکی نے شام کے شہر الحسکہ کی پینے کے پانی کی سپلائی کو بند کرکے اس شہر کے باشندے پانچ لاکھ شامی شہریوں کی زندگیوں کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔

ولایت پورٹل:شام کی سرکاری نیوز ایجنسی سانا کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے بچوں کے فنڈ (یونیسیف) نے ترک حکومت اور اس کے حمایت یافتہ دہشت گرد گروہوں کی جانب سے شام کے شہر الحسکہ اور اس کے نواح میں پینے کے پانی کی سپلائی روکنے کے اقدام کو مسترد کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ اس طرح ترکی نے تقریبا پانچ لاکھ افراد کی جانوں کو خطرہ لاحق کردیا ہے،وہ بھی  ایسے وقت میں جب دنیا کورونا  وائرس کا مقابلہ کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔
شام میں یونیسف کے نمائندے فرانک اکاٹا نے ایک بیان میں کہا  الحسکہ شہر کے ہمسایہ قصبوں اور کیمپوں کے پانی کی فراہمی کے مراکز پر ترکی کے مسلسل حملوں کی وجہ سےاس شہر کا علوک واٹر پمپنگ اسٹیشن ایک بار پھر بند ہوگیا ہے۔
انھوں نے مزید کہا کہ مذکورہ اسٹیشن سے پانی کی سپلائی کے رک جانے سے وہ بھی ایسے وقت میں جبکہ دنیا کورونا وائرس کے ساتھ جدوجہد کر رہی ہے ، اس شہر کے بچوں اور ان کے اہل خانہ کو ناقابل قبول خطرہ میں ڈال لاحق ہوگیا ہے کیونکہ کورونا سے لڑنے کے لیےصابن اور پانی سے ہاتھ دھونا ضروری ہے۔
یونیسف کے نمائندے نے ترکی اوراس کے حمایت یافتہ دہشت گرد گروہوں پر زور دیا کہ وہ فوجی یا سیاسی فوائد حاصل کرنے کے لئے آبی وسائل اور اسٹیشنوں کا استعمال نہ کریں  کیونکہ اس سےبچوں کو سب سے زیادہ نقصان ہوگا۔
واضح رہے کہ الحسکہ اور اس کے آس پاس کے قصبوں میں منگل کے روز لگاتار تیسرے دن بھی پانی کی سپلائی بند رہی اس لیے  ترکی اور اس کے حمایت یافتہ دہشتگردوں نے راس العین کے مضافات میں  واقع الوک واٹر پمپنگ اسٹیشن بند کردیا تھا۔


 
 


0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین