Code : 2526 38 Hit

بن سلمان کا دست راست ترکی آل الشیخ بیمار،علاج کے لیے بیرون ملک روانہ

سعودی عرب کی تفریحی اور سیاحتی تنظیم کے سربراہ،بن سلمان کے دست راست سمجھے جانے والے ترکی آل الشیخ متعدد بیماریوں میں مبتلا ہیں جن کے علاج کے لئے وہ بیرون ملک روانہ ہوگئے ہیں۔

ولایت پورٹل:المصریة السعودیہ اور المصری الیوم نیوز ایجنسیوں نے سعودی ولی عہد بن سلما کےمشیر اور سعودی عرب کی تفریحی اور سیاحتی تنظیم کے سربراہ ترکی آل الشیخ کی علاج کے بیرون ملک سفر کرنے کی خبر نشر کی ہے،ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ امریکی اور یورپی طبی ٹیم ان کی نگرانی کر رہی ہے، اندرونی طور پر خون بہنے کی پریشانی ہے،پیروں میں منظم طریقہ سے خون نہیں پہنچ رہا ہے نیز سر میں ایک ٹیومر سے جس کو چھیڑنا ڈاکٹر فی الحال مناسب نہیں  سمجھتے ہیں،ذرائع ابلاغ کی ان کی جلد ہی وطن واپسی کی امید کا اظہار کیا ہے تاہم یہ نہیں واضح کیا کہ  وہ کس ملک میں گئے ہیں  البتہ پچھلے سال وہ علاج کی غرض سے امریکہ گئے تھے،گذشتہ نومبر میں جب  آل شیخ  نیویارک سے علاج کروا کے اور کئی آپریشن کرانے بعد واپس آئے تو  بعض ذرائع نے ان کے کینسر میں مبتلا ہونے کی خبریں نشر کی تھیں جن  کی انہوں نے ٹویٹر پوسٹ میں تردید کی تھی،قابل ذکر ہے کہ سعودی عرب کی تفریحی اور سیاحتی تنظیم کے  سربراہ ترکی آل شیخ محمدبن سلمان کی قریبی اور وفادار شخصیات میں سے ایک ہیں ، وہ ایک سال سے اس عہدہ پر فائز ہیں  اور بہت سے لوگ انھیں محمد بن سلمان کے دائیں ہاتھ کے طور پر دیکھتے ہیں،وہ اس سے قبل سعودی وزارت داخلہ میں فوجی افسر کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے تھے  اس کے بعد اپنی خدمات کی وجہ سے وہ شاہی عدالت کے مشیر مشیر کے عہدے پر فائز ہوئے،بن سلمان کی ان پر خاص توجہ کی وجہ سے ان کے بہت ساتھ چچا زاد شہزادوں کو اس حد تک اعتراض ہے کہ انھوں نے اس کی وجہ سے بن سلمان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ وہ تفریحی اور سیاحتی تنظیم کے  سربراہ کو اپنے چچازادوں پر ترجیح دیتے ہیں۔


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम