Code : 3125 19 Hit

ڈیموکریٹس کے اندرون پارٹی انتخابات کے ابتدائی نتائج پر ٹرمپ کا پہلا رد عمل

امریکی صدر نے ڈیموکریٹس کے بڑے منگل کے انتخابات کے ابتدائی نتائج پر اپنے پہلے ردعمل میں جو بائیڈن اور برنی سینڈرز کی کارکردگی کا ذکر کیے بغیر ، مائیکل بلومبرگ اور الزبتھ وارن پر زور دیا کہ وہ اس دوڑ سے دستبردار ہوجائیں۔

ولایت پورٹل:امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے چودہ ریاستوں میں ڈیموکریٹک انٹرا پارٹی انتخابات کے ابتدائی نتائج اور جو بائیڈن کی برتری پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اس پارٹی کے دو امیدواروں کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایاہے۔
یہ انتخابی نتائج ڈیموکریٹس کے لئے بہت اہم ہیں کیونکہ حلقہ بندیوں کی زیادہ تعداد اور پارٹی امیدواروں کی پارٹی کے درمیان انتخاب جیتنے کی راہ ہموار کرنے پر ان کے اثرات مرتب ہوں گے۔
ڈونلڈ ٹرمپ نے مذکورہ  ڈیموکریٹک انتخابات کے نتائج پر اپنے پہلے رد عمل میں پارٹی میں شامل دو سرکردہ امیدواروں کا کوئی ذکر نہیں کیا ،اس کے بجائے دو ڈیموکریٹک امیدواروں کو تنقید کا نشانہ بنایا۔
امریکی صدر نے ایک ٹویٹ میں اپنے سابق دوست ارب پتی امیدوار اور نیویارک کے سابق میئر مائیکل بلومبرگ  اور ڈیموکریٹک سینیٹر الزبتھ وارن پر زور دیا کہ وہ  صدارتی انتخاب سےدستبردارہوجائیں۔
انھوں نے اس سے پہلے بھی بلومبرگ اور وارن کے نام رکھے تھے اور ان کا مذاق اڑاتے ہوئے  لکھا کہ الزبتھ پوکوہنٹس اور چھوٹا مائک ہار گئے۔
ٹرمپ نے طنز کرتے ہوئےلکھا کہ وہ (وارن) اپنی آبائی ریاست میساچوسیٹس میں بھی نہیں جیت سکی، اب وہ اپنے شوہر کے ساتھ بیٹھ سکتی ہے اور اچھی ٹھنڈی بیئر لے سکتی ہے۔
ٹرمپ نے مزید کہا کہ آج کی رات سب سے سے برے طریقہ سے ہارنے والا چھوٹا مائک بلومبرگ ہے،اب اس کے جانےکا وقت آگیا ہے اس لیے کہ اس نے 700ملین ڈالر کو گٹر میں ڈال دیا ہے نیز خود کو مکمل طور پر برباد کردیا ہے۔


 




0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम