ٹرمپ نے ایک بار پھر اقوام متحدہ کو امریکہ سمجھا:ایران

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ٹرمپ کے خطاب کے بعد کہاکہ اس نے ایک بار پھر اقوام متحدہ کو ریاستہائے متحدہ سمجھا۔

ولایت پورٹل:فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سعید خطیب زادہ نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خطاب کے بعد ایک ٹویٹ میں لکھا ہےکہ ٹرمپ نے ایک بار پھر اقوام متحدہ کو امریکہ سمجھا ہے، انہوں نے مزید کہاکہ ٹرمپ نے جنرل اسمبلی میں اس طرح تقریر کی جیسے وہ کسی انتخابی جلسے میں موجود ہوں،انھوں نے "اکیلے امریکہ" کی ناکام پالیسی کی تعریف اور توصیف اور دوسروں کو خود غرض بحرانوں کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کوویڈ 19 کو مہار کرنے میں اپنی تباہ کن انتظامیہ سے لے کر بین الاقوامی کشیدگی کو ہوا ددی۔
فارس نیوز ایجنسی کے مطابق  امریکی صدر نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں اپنے خطاب میں کہا کہ واشنگٹن ایران کے ساتھ ہونے والے  خوفناک معاہدے سے دستبردار ہوگیا اور ایران کے خلاف مفلوج کردینے والی پابندیاں عائد کردیں، امریکی صدر نے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کرنے پر مبنی اپنی دہشت گردی کی کارروائی کا حوالہ دیتے ہوئے دعوی کیا کہ واشنگٹن دہشت گردی کی روک تھام کے لئے کوشاں ہے، ٹرمپ نے کہا امریکہ امن کے سفیرکی حیثیت سے اپنے مشن پر عمل پیرا ہے  لیکن ہم طاقت کے ذریعے امن کے خواہاں ہیں۔





0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین