Code : 1419 49 Hit

ٹرمپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ ایران کے ساتھ جنگ کرنا آسان نہیں: سی آئی اے کے سابق آفیسر

سی آئی اے کے سابق افسر کا کہناہے کہ صدر ٹرمپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ جب امریکہ عراق اور طالبان کے خلاف جنگ میں کامیاب نہیں ہوسکا تو ایران کے خلاف جنگ میں کیسے کامیاب ہوگا ۔

ولایت پورٹل:سی آئی اے کے سابق افسر اور امن نوبل انعام کے امیدوار رابرٹ ڈیویڈ اسٹیل نے کہا ہے کہ صدر ٹرمپ اچھی طرح جانتے ہیں کہ جب امریکہ عراق اور طالبان کے خلاف جنگ میں کامیاب نہیں ہوسکا تو ایران کے خلاف جنگ میں کیسے کامیاب ہوگا ایران تو طالبان اور عراق سے کہیں زيادہ قوی ، مضبوط اور طاقتور ہے،گذشتہ سال امریکی صدر ٹرمپ، ایران اور گروپ 1+5 کے درمیان ہونے والے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج ہوگئے اور اس کے بعد امریکہ نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایران پر دوبارہ اقتصادی پابندیاں عائد کردیں، امریکہ کے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے خارج ہونے کے ایک سال بعد معاہدے کی روشنی میں ایران نے بھی مشترکہ ایٹمی معاہدے کی بعض شقوں سے خارج ہونے کا اعلان کیا ہے، ایران کے اس قانونی اعلان کے بعد امریکہ اور یورپی ممالک میں کھلبلی مچی ہوئی ہے، سی آئی  اےکے سابق افسر نے روسی ٹی وی کے ساتھ گفتگو میں امریکہ کی طرف سے خلیج فارس میں 120000 فوجیوں کو بھیجنے کی خبر کی تردید کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ روسی ٹی وی کے ساتھ گفتگو پر خوشحال ہوں کیونکہ مجھے  امریکی ذرائع ابلاغ میں جھوٹی اور غلط خبرکے شائع‏ ہونے پر تشویش تھی اور میں نے روسی ذرائع اور یوٹیوب کے ذریعہ امریکی ذرائع ابلاغ ميں شائع ہونے والی جھوٹی خبر کی تردید کی،ٹرمپ نے واضح طور پر کہا ہے کہ اسے وزیر خارجہ پمپئو اور قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن کی صداقت پر شک اور عدم اطمینان ہے، اور ٹرمپ کہہ چکے ہیں کہ اس کا ایران کے ساتھ جنگ کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے، اور نیویارک ٹائمز نے بھی اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ٹرمپ نے عدم جنگ کے  اپنے ارادے سے پینٹاگون کو آگاہ کردیا ہے، سی آئی اے کے سابق افسر نے کہا کہ صدر ٹرمپ نے فیکس نیوز کے ساتھ گفتگو میں بھی کہا ہے کہ ان کا فوجی جنگ کا کوئی ارادہ نہیں بلکہ وہ تجارتی جنگ جاری رکھنے کے عزم پر قائم ہیں، سی آئی اے کے سابق افسر کا کہنا ہے کہ امریکی صدر اچھی طرح جانتے ہیں کہ ، ایران کے ساتھ جنگ آسان نہیں ۔
مہر


0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम