Code : 2787 133 Hit

ایران کا مقصد ہماری تنصیبات کو تباہ کرنا اور ہمارے فوجیوں کو ہلاک کرنا تھا:امریکی مسلح افواج کے سربراہ

امریکی مسلح افواج کے سربراہ نےعین الاسد بیس پر ایران کے میزائل حملے سے ہونے والے نقصان کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس حملہ میں ایک ہیلی کاپٹر سمیت کافی مقدار میں فوجی ساز و سامان تباہ ہوا ہے۔

ولایت پورٹل:روئٹرز نیوز ایجنسی کی رپورٹ کےمطابق امریکی مسلح افواج کے چیف آف اسٹاف مارک ملی نے بدھ کی شب امریکی صحافیوں کے ایک گروپ کے سامنے عراق میں امریکی فوجی اڈوں کے خلاف اسلامی جمہوریہ ایران کے آپریشن کے بارے میں وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ میزائل ایران میں تین مقامات سے فائر کیے گئے ہیں،تاہم  انہوں نے میزائلوں کے صحیح مقام کے بارے میں تفصیلات فراہم نہیں کیں،انہوں نے بتایا کہ ایران نے امریکی اڈوں پر مجموعی طور پر 16 بیلسٹک میزائل داغے جن میں سے 11عین الاسد اڈے پر اور 1اربیل میں قائم امریکی فوجی اڈے پر لگا نیز 4میزائل نشانہ پر نہیں لگے ہیں،واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ  نے دعوی کیا  تھاکہ امریکی فوجیوں کو اس حملے میں کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے  لیکن ملی  نے مادی نقصان کو  بھی کم سے کم ظاہر کرنے کی کوشش کی ہے،تاہم انہوں نے تصدیق کی کہ اس حملے میں امریکی فوج کےایک ہیلی کاپٹر کو نقصان پہنچا ہے،واضح رہے کہ امریکی فوج کے اعلی کمانڈر نے اعادہ کیا کہ ان میزائلوں کا مقصد امریکی فوجیوں کوہلاک کرنا تھا،تاہم انہوں نے دعوی کیا ہے کہ امریکی فوجیوں کو میزائل حملوں سے بچنے کے انتباہی نظام کی بدولت پناہ لینے کا موقع مل گیا،ملی نے اس سلسلہ میں مزید  کہا کہ جو کچھ میں نے دیکھا ہے اور جو میں جانتا ہوں اس کی بنیاد پر  مجھے یقین ہے کہ ان کا مقصد ہماری تنصیبات کو نقصان پہنچانا ، سازو سامان ، گاڑیوں اور طیاروں کو تباہ کرنا اور فوجیوں کو ہلاک کرنا تھا۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम