Code : 2698 11 Hit

برہم صالح نے اپنا موقف بیان کیا ہے نہ کہ استعفی دیا ہے: عراقی پارلیمنٹ ڈپٹی اسپیکر

عراقی پارلیمنٹ ڈپٹی اسپیکر نے کہا کہ صدر نے پارلیمنٹ اسپیکر کے نام لکھے جانےوالے اپنے خط میں باضابطہ استعفی نہیں دیا ہے بلکہ عراقی وزیر اعظم کے انتخاب کو پیچیدہ قرار دیا ہے ۔

ولایت پورٹل:المعلومہ نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق عراقی پارلیمنٹ  کے ڈپٹی اسپیکر بشیر الحداد نے جمعہ کو عراقی صدر کی جانب سے پارلیمنٹ کو لکھے گئے  خط کا  ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ وزیر اعظم کی تقرری کے سلسلہ میں صدر کا مؤقف ہے نہ کہ استعفیٰ دینے کی سرکاری درخواست نیز سب کو مل کر  ملک کو تباہی اور مزید پریشانیوں سے بچانے کے لئے زیادہ عقلی طریقے سے کام کرنا ہوگا،الحداد نےاپنے بیان میں  مزیدکہاعراقی سیاسی رہنماؤں اور قومی دھڑوں اوجماعتوں کے سربراہوں کو موجودہ حالات نیز بغداد اوردیگر  عراقی صوبوں میں جاری  عوامی مظاہروں کو مدنظر رکھتے ہوئے  وزیر اعظم کے لئے اکثریتی جماعت کے نامزد امیدوار کا تعین کرنے کے لئے صدر کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہئے،انہوں نے مزید کہاکہ وزارت عظمیٰ کے امیدوار کو عوام میں مقبول شخصیت کا حامل  اور سیاسی معاہدے کی بنیاد پر اور ملک کے اعلی مفادات کے مطابق ہونا چاہیے خاص طور پر ان حالات میں جبکہ  ہم ایک فیصلہ کن مرحلے اور ایک سیاسی بحران سے گزر رہے ہیں،الحداد نے جمعرات کے روز صدر کی جانب سے  پارلیمنٹ کو  لکھے جانے والے خط طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ صالح نے اپنے خط میں جو کچھ کہا وہ موجودہ دباؤ کی وضاحت ہے اورانھوں نے اپنے استعفی دینے کی تیاری کی وجہ  سیاسی بحران  اور وزیر اعظم کے امیدوار پر متفق نہ ہونا بیان کی ہےجویہ ایک حقیقی اور پیچیدہ سیاسی بحران ہے،عراقی پارلیمنٹ کے مذکورہ عہدہ دار  نے سب سے اپیل کی  ہے کہ وہ ملک کو تباہیوں اور پریشانیوں کی دلدل میں پھنسنےسے بچانے کے لیے  اپنی منطق ، حکمت اور دانشمندی کا استعمال کریں۔

0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम