امریکہ اور ترکی کی ہمارے ملک میں موجودگی بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے :شام

شام کے وزیر خارجہ نےاپنے ملک میں امریکی اور ترک فوجیوں کی موجودگی کو بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی قرار دیا۔

ولایت پورٹل:شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سانا کی رپورٹ کے مطابق شام کے لیے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کے خصوصی ایلچی گیئر پیڈرسن نےاس ملک وزیر خارجہ فیصل مقداد سے ملاقات کی،رپورٹ کے مطابق دونوں فریقوں نے شام  کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا، جس میں استحکام کو مضبوط بنانے اور قومی مفاہمت نیز تصفیہ کے عمل کے دائرہ کار کو وسیع کرنے کی کوششوں کے ساتھ ساتھ اس ملک  کے سیاسی عمل میں ہونے والی تازہ ترین پیش رفت پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔
شام کے وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ شام کے کچھ حصوں میں امریکی اور ترک قابضین کی مسلسل موجودگی اس کی خودمختاری کے ساتھ ساتھ بین الاقوامی قوانین اور سلامتی کونسل کی تمام قراردادوں کی خلاف ورزی ہے، کہا کہ شام کے خلاف لازمی اور یکطرفہ اقدامات  اس ملک کے عوام کےمصائب کی بنیادی وجہ ہیں۔
 پیڈرسن نے کئی ممالک کے اپنے حالیہ دوروں کے نتائج اور شام کی آئینی کمیٹی کے کام کو دوبارہ شروع کرنے کے لیے کی جانے والی کوششوں کو بھی بیان کیا، انہوں نے ملاقات کے بعد کہا کہ شامی حکومت کے ساتھ ہماری بات چیت جاری رہے گی اور میں شام کی آئینی کمیٹی کے ساتویں دور کے اجلاس کے بارے میں زیادہ پر امید ہوں۔

0
شیئر کیجئے:
ہمیں فالو کریں
تازہ ترین