Code : 3299 25 Hit

یمن میں سعودی اتحاد کے ٹھکانوں میں داعش کی موجودگی

یمنی فوج نے صوبہ الجوف کی آزادی کے دوران ایک گاؤں کو آزاد کرایا ہے جسے داعشی اپنے ہیڈ کوارٹر کے طور پر استعمال کررہے تھے۔

ولایت پورٹل:یمن کے المسیرہ نیوز چینل نے صوبہ الجوف میں یمنی فورسز اور عوامی کمیٹیوں کے آپریشنوں کی کوریج کے دوران متنازعہ  علاقوں کی کچھ ایسی تصاویر شائع کی ہیں جن سے معلوم ہوتا ہے کہ سعودی اتحاد یمنیوں کا مقابلہ کرنے کے لیے  القاعدہ اور داعشی عناصر کو استعمال کررہا ہے۔
شائع ہونے والی تصاویر سے معلوم ہوتا ہے کہ  داعش کے دہشت گردوں نے سعودی اتحاد کے زیر قبضہ واحد باقی علاقہ ، مشرقی صوبے الجوف کے المرواں علاقے میں شہریوں کے گھروں کو فوجی اڈوں اور اسلحہ اور بارودی سرنگوں میں تبدیل کردیا تھا۔
تصاویر  میں عام شہریوں کے گھروں میں داعش اور القاعدہ کےجھنڈے اور نعرے دیکھے جاسکتے ہیں۔
اسی طرح بارودی سرنگوں اور خودکش بیلٹ بنانے کے لئے بڑی بڑی ورکشاپس کے علاوہ  کاروں کو دھماکہ خیز مواد سے لیس کرنے کے لئے ورکشاپس بھی موجود تھیں۔
بعض گھروں میں داعش کی نصابی کتابیں اور پرچے بھی ملے ہیں۔
یمنی فورسز کو  مذکورہ علاقہ میں کارروائی  کرنے کے دوران ایس سرنگ اور گڑھے بھی ملے ہیں جنہیں داعش کے دہشت گرد جیل کے طور پر استعمال کرتے تھے۔




0
شیئر کیجئے:
फॉलो अस
नवीनतम